پاک فوج کے جری جوانوں کو میرا پیغام

پاک فوج کے جری جوانوں کو میرا پیغام


میرے پاک فوج کے شیر جن کی گھن گرج سے اللہ نے اس سارےزمانے کو مغلوب کردیا. آپ یہ نہ سوچیں کہ آپکو گالیاں پڑ رہی ہیں آپ یہ سوچیں آپکو گالیاں کیوں پڑ رہی ہیں تو آپ کو یہ گالیاں بھی ایک نعمت لگیں گی آپکے لیے باعثِ تسکین ہوں گی.

 

دشمن آپ لوگوں کو نقصان پہنچاتے پہنچاتے پاگل ہوچکا ہے.آپ نے دشمن کو ایسی ایسی جگہ چوٹ پہنچائی ہےکہ دشمن نہ بتاسکتا ہے نہ دکھا سکتا ہے. آپ کا دشمن الحمدللہ آپکے سامنے بےبس ہے خدا کی قسم آپکا دشمن بے بس ہوچکا ہے.خود کو دنیا کی سپرپاور کہنے والی طاقتیں جو خود کو دنیا کا خدا سمجھتی رہیں،جن کو لگاکہ وہ جس کو چاہیں کو چاہیں آباد کریں جس کو چاہیں برباد کریں وہ دشمن جو دنیا کی ساری ٹیکنالوجی اور ہتھیاروں سے لیس ہے ،وہ دشمن جو کہتا ہے زیرِزمیں بھی میں ہوں اور خلاء بھی میرا، وہ دشمن جو آدھی دنیا کو بردباد کرچکا ہے، وہ دشمن جو آج آپکے پڑوس میں 50 ملکوں کی فوج لےکر آپکو مٹانے آیا تھا جو آج صحراؤں اور بیابانوں کی خاک چھان رہا ہے اور آپ جہاں تھے اس آب شان اسی آب وتاب سے جگمگارہے ہیں. دشمن خاک ہوا دشمن آپکے قدموں میں ڈھیر ہوا. لوگ کہتے ہیں آرمی کو گالی پژتی ہے تو مورال ڈاؤن ہوتا ہے آؤ میں بتاؤں تمھیں کہ اگر گالی پہ مورال ڈاون ہوتا ہے تو اس گالی کےپیچھے چھپی دشمن کی تکلیف کہ دشمن کیوں غصہ سے ابل رہا یے جان کر تو آپ اس گالی کو ترس جائیں گے.

 

جانتے ہو وجہ جانتے ہو کہ جب دنیا بنی تھی اللہ نے اپنے پیارے نبی پاک کو عالمِ برزخ میں وجود بخشاء آپکے ساتھ آپکی امت لکھ دی گئی امت سے جڑی ساری تقدیر لکھ دی گئی.دجال کا آنا، جنگوں کا چھڑنا،وہ کفر اور اسلام کے معرکے،وہ حق اور باطل کی آمنا سامنا اللہ نے سب کچھ واضح طور پر لکھدیا تھا.پھر اللہ نے امتِ محمدیہ کو وجود بخشا جس جس خوش قسمت سے اسلام کا کام لینا تھا ان سب خوش نصیبوں کو اللہ نے چنا اور تم جانتے ہو تم انہی میں سے ایک ہو تم چنے ہوئے ہو. یہ جو ماتھے پہ شہادت کا ٹیکا لگا کے سج دھج کے مقتل میں جاتے ہو کیا یہ ایویں ہوگیا، نہیں آپ کے پیدا ہونے سے پہلے آپکو ایک عظیم رُتبے سے نواز دیا گیا تھا.کیوں نہیں سوچتے کے اللہ نے آپ کو کیسے کہاں کہاں سے چن کے اپنے دین کے لیے منتخب کیا.

 

ایک گالی تمھارا مورال کیسے گرا سکتی ہے تو یہ بات تمھیں شہادت کا متلاشی نہیں کرسکتی کہ سردارُ الانبیاء کی امت میں سب سے افضل دین کے لیے اور کائنات کے گنے چنے لوگوں میں آپ گنے جاچکے ہیں.

آپ جوانوں کی پیدائش سے 1400 سال پہلے آپ کے لیے نبی پاک ﷺ دعا فرماء چکے ہیں. دنیا کی ایسی کون سی فوج ہے ایسے کون سے دیوانے جانثار ہیں جن کے لیے اپنے نبی یوں فتح کی نوید سنا چکے ہیں.لڑنا تو دوت کی بات تم پیدا بھی نہیں ہوئے اور تم جیت چکے ہو.تم لڑے بھی نہیں لیکن تمھیں بتایا جاچکا کہ غالب تم ہو.تم ہندوستان سے بھی جیت چکے تم دجال کے مقابل بھی فاتح ٹھہرے.کوئی فوج یہ دعوے سے نہیں کہہ سکتی کہ ہم مستقبل کے فاتح ہیں لیکن بفضلَ خدا، دعاءِ سرکار انبیاء آپ فاتح کہے جاچکے ہیں.

 

آپکو خاص مقصد کے لیے ہی بھیجا گیا اسلام کی باگ دوڑ اسلام کی فتح اللہ نےآپکا مقدر کردی. اس سے بڑی سعادت اور کیا ہوگی کہ اللہ کی ابابیلیں ہیں آپ جنہیں آج کے ابراہا اور اسکے ہاتھیوں کے مدمقابل اللہ نے چن کے اپنے گھر اور دربارِ رسالت کی حفاظت کے لیے آپکو چنا. دنیا کی جس کفریہ طاقت کے گردن میں سریا پڑا اس کے علاج کے لیے اللہ نے اسے تمھارے پاس بھیج دیا.روس کو دیکھو خود کو خدا سمجھ کے بیٹھا تھا افگاندستان آیا تاکہ انڈیا کی مدد سے ارمان پورے کرتے ہوئے پاکستان کے پانیوں تک پہنچ سکے مگر اللہ نے اسی پاک فوج کے ہاتھ روس کے اتنے ٹکڑے کیے آج تک روس اس صدمے سے نہ نکل سکا.

 

اس کے بعد امریکہ آیا اس نے وہ وقت دیکھا کہ اب رہتی دنیا تک امریکہ کو افگاندستان آنے پہ شرمندگی رہے گی کون تھا یہاں پاکستان کا محافظ تم تھے تم پاک فوج کے جوانوں تم. ایک ارب سے ذیادہ آبادی والا ملک ہندوشیطان جسکی تم سے ذیادہ فوج ایک کشمیر میں ہے پھر بھی انکا بڑے سے بڑا جنرل بھی تمھارا نام سن سے اپنی پتلون میں ہی گنگا اشنان کرلیتا ہے.تم کیوں نہیں دیکھتے کہ تم جہاں قدم رکھتے ہو تمھارا لیے راستے مُسخر ہوجاتےہیں. تم کیوں نہیں دیکھتے کے ہے دریاؤں کےسینے چیرتے ہو تو دریاؤں پہ ہیبت طاری ہوجاتی ہے.کیا تم نہیں جانتے کہ پہاڑوں کو اللہ نے تمھاری ہیبت سے رائی رائی کردیا تمھیں یہ اندازہ کرتے ذرا بھی متزلزل نہیں ہونا چاہیے کہ اللہ نے کہاں کہاں تمھیں ٹرین کیا.تم پاکستان کے کوہساروں میں لڑے ہو،تم یورپ کے نخلستانوں میں لڑے ہو.تم عربوں میں لڑےہو، تم فلسطین کے لیے کھڑے ہو.

 

تم نےاسرائیل کو روندا ہے تم نے دہشتگردوں کو روندا تم نے وہ جنگ جیتی جو ناممکن سی جنگ تھی تم نے ایسا دشمن کو پچھاڑا بلکہ چن چن کے مارا جس کا لباس،ثقافت،رہائش،کھانا پینا،بولنا،چلنا پھرنا،سونا جاگنا سب تم جیسا ہی تھا تم نے انہیں بلوں سے نکال نکال کر مارا.تمھارے ان نوجوانوں نے شہادت کا جام پیا جن کی عمر کے نوجوان ابھی اٹھکیلیاں کرتے پھرتے ہیں.تم جانتے ہو میرِ عرب تمھارے بارے میں کہہ گئے ہیں کہ مجھے مشرق سے ٹھنڈی ہوائیں آتی ہیں کس لیے آتی ہیں جانتے ہو صرف اس وجہ سے کہ اس پاک دھرتی میں فیضانِ نبوی شامل ہے اور اس دھرتی کے شیر بیٹوں نے ان کافروں سے جہاد کرنا جنہوں نے طائف میں حضور نبی پاک ﷺ کو لہولہان کیا تھا.تم اپنا مقام جانتے ہو تمھیں اللہ نے کیا مقام دیا.تمھیں اللہ نے غزوہ ہند کا تحفہ دیا تمھیں اللہ افضل ترین شہداء کا درجہ دیا،تمھیں اللہ نے خوارج کے خلاف جہاد کا حکم دیا، تم سے اللہ نے کعبتہ اللہ کی حفاظت کا کام لیا.کبھی یہ سوچ کے مورال کو آسمان کی بلندیوں تک پہنچا دو کہ تم اسلام کے قلعہ پاکستان کے مجاہد ہو.

 

تمھیں دشمن پاکستان کی وجہ سے نہیں اسلام کی وجہ سے شہید کرتا ہے پاکستان اور اسلام کو الگ کرو سارا جھگڑا ختم. تم اسلام کی فوج ہو تم میرے حضور نبی پاک ﷺ کی فوج ہو. تم کفر کی موت ہو یہودیوں کی موت ہو،تم اسلام دشمنوں کی موت ہو، تم مہدی کے ساتھ تم عیسیٰ کے ساتھ ہو. تم 50 لاکھ شہیدوں کے پاک لہو کے وارث ہو. تم نے دفاع سے لیکر کھیل کے میدان تک جہاں قدم رکھا تم کامیاب و کامران ٹھہرے.تم ہو پاک فوج تم ہو پاک فوج کے شیر.گولی تمھارا مورال نہیں گرا سکی تو گالی کی اتنی ہمت اور اوقات کہاں.میں لکھتاجاؤں تو سالوں لگ جاؤں بس آخر میں یہ کہوں گا کہ تمھیں اللہ نے بہت بڑے مقصد کے لیے چنا ہے.

 

تمھیں حضور نبی پاک ﷺ نے غزوہِ ہند کے لیے چنا ہے. اس سے بڑا فخر کیاہوگا کہ تم خالقِ کائنات اور وجہہ کائنات کے چنے ہوئے ہو یہ بات کسی بھی مورال کسی بھی ہمت و طاقت سے کہیں آگے کی بات ہے. ہمت نہ ہارنا تم نے دشن کو گولی سے گالی تک پہنچایا ہے ان شاءاللہ فتح تمھاری ہے. کبھی دل میں کھٹکا آئے تو اپنی اہمیت پہ دھیان دینا.تم نے کل اللہ و حضور نبی پاک ﷺ کے ساتھ ساتھ 50 لاکھ شہیدوں اور مسلم امہ کے سامنےکھڑا ہونا ہے تو آج وقت ہے کل کو سر اٹھانے کے لیے. 2200 لوگ گالی دیتے ہیں تو 22 کروڑ دعا بھی دیتے ہیں.ہمت نہ ہارنا کتوں کے بھونکنے سے دل چھوٹا نہ کرنا. تمھاری منزل کہکشاں ہے راستے میں بھونکتے کتوں پہ ٹھہر گئے تو وقت گنوا دو گے آگے بڑھو گالی کو نعمت سمجھو، گالی سن کے پرسکون ہو جاؤ کہ دشمن کو چوٹ پڑی ہے. کوئی تمھیں عزت دے نہ دے اللہ نے تمھیں عزت دی ہے اللہ کے نبی پاک نے تمھیں عظیم رتبے کی خوشخبری دی ہے.چند ایک کی گالیوں کو دل پہ لیکر 22کروڑ کے دل میں موجود اپنی اہمیت نہ گنوانا.اللہ آپ سب کا حامی و ناصر ہو آمین

لڑو،بڑھو،کٹو جی جاں سے کہ ابابیلِ خدا ہو تم

بھروسہِ دین و ملت، دعائےِ نبیِ دو جہاں ہوتم (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)

تحریر: انوکھا سپاہی