دنیا کی نمبر ١ خفیہ ایجنسی آئی ایس آئی

دنیا کی تمام خفیہ ایجنسیوں کے مقابلے میں ISI نمبر 1 ہے,


کہیں کہیں ناکامی بھی ہوتی ہوگی، لیکن کامیاب کاروائیاں انکے مقابلے میں زیادہ ہوتی ہیں-

موجود 4th اور 5th جنریشن کی جنگوں میں دشمن واضح نہیں ہوتا- 

آپ کیسے اندازہ لگاٶ گے کہ عوام کے اندر کون خود کش پھر رہا ہے؟

دشمن آپ کے سیاستدانوں آپکے ججوں اور آپ کے صحافیوں کو خرید کر ان سے سہولت کاری کرواتا ہے-

پاکستان کا دفاعی بجٹ صرف 6 ارب ڈالر ہے،

اسکے مقابلے میں امریکی فوج کا بجٹ 798 ارب ڈالر ہے، اس میں بھارت، اسرائیل اور نیٹو کے باقی 44 ممالک کا بجٹ ملاٶ تو کوئی معجزہ ہی ہے جو آئی ایس آئی ان کا مقابلہ کر رہی ہے،

یعنی دشمنوں کا ضمیر فروشوں کو خریدنے کی اہلیت ہم سے زیادہ ہے،

نیشنل ایکشن پلان میں صرف 3 نقاط کا تعلق آئی ایس آئی اور فوج کے ساتھ ہے 

باقی 17 نقاط پر سول حکومت، عدالتوں، اور میڈیا جیسے اداروں نے عمل کرنا ہے،

فوج تو اپنے 3 نقاط پر ضرورت سے بھی زیادہ عمل کر رہی ہے-

لیکن باقی سیاست دان یا ادارے اپنے 17 نقاط پر عمل تو چھوڑو، الٹا فوج کی راہ میں بھی رکاوٹیں ڈال رہے ہیں

اور دہشتگردوں اور دشمن خفیہ ایجنسیوں کی سہولت کاری بھی کرتے ہیں،

فوج اگر ان کو کچھ کہتی ہے تو کہتے ہیں کہ فوج جمہوریت کو چلنے نہیں دے رہی،

فوج کرے تو کیا کرے؟