امریکی مڈٹرم انتخابات میں 55 مسلم امریکن امیدوار کامیاب

امریکی کانگریس اور کاؤنسلز سمیت مختلف عہدوں پر مڈٹرم انتخابات میں 55 مسلم امریکن امیدوارکامیاب ہوگئے ہیں ۔ ان میں سے 11کا تعلق کیلیفورنیا سے ہے ۔

ڈیموکریٹک پارٹی سے تعلق رکھنے والے پاکستانی امریکن حسن جلیسی مسلسل دوسری بار میری لینڈ کی ریاستی اسمبلی کے رکن منتخب کرلیے گئے ہیں ۔

منی سوٹاسےالہان عمر اور مشی گن سے رشیدہ طلیب کانگریس کی رکن بننےوالی پہلی مسلم خواتین ہیں۔

ڈیموکریٹ پارٹی سےتعلق رکھنےوالی 36 برس کی الہان کاآبائی تعلق صومالیہ سےہے۔دوسری مسلم خاتون رشیدہ طلیب ہیں جن کافلسطین سےہے۔ اس وقت کانگریس میں کیتھ ایلیسن سمیت دومسلم مردرکن ہیں۔

مڈٹرم الیکشن میں کیلی فورنیاکے بےایریاسے 5 مسلم امریکن خواتین لوکل آفس کی رکن بننے میں بھی کامیاب ہوگئی ہیں۔

صبینہ ظفر ٹیکنالوجی ایگزیکٹوہیں جو سین رامن سٹی کونسل کی رکن منتخب ہوئی ہیں اور فرح خان بھی کیلیفورنیاہی سے کونسل کی رکن بننےمیں کامیاب ہوئی ہیں۔

عائشہ وہاب بزنس انفارمیشن ٹیکنالوجی کنسٹنٹ ہیں جو ہےوارڈ سٹی کونسل کی رکن بنی ہیں جبکہ میمونہ افضل برٹااسپیشل ایجوکیشن ٹیچرہیں جو فرینکلین مک کنلےاسکول بورڈکی رکن منتخب کرلی گئی ہیں،شیرل سدات مالیکیولربائیولوجسٹ ہیں جو ویسٹ کاؤنٹی ویسٹ واٹرڈسٹرکٹ بورڈکی رکن بنی ہیں۔

اٹارنی جاویدالٰہی سانتاکلاراکاؤنٹی میں مونٹی سیرینو سٹی کونسل کی رکن منتخب کی گئی ہیں۔

منگل کوہونے والے مڈٹرم الیکشن سے پہلے لوکل کونسلز،پینلز اوربورڈ میں صرف ایک مسلم خاتون عزیزاکبری رکن بن سکی تھیںجوالمائدہ کاؤنٹی واٹرڈسٹرک بورڈکی ڈائریکٹر تھیں۔

آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎

?>