عراق میں پھنسے زائرین بحفظات وطن واپس روانہ

اسلام آباد: عراق میں موجود پاکستانی سفارت خانے نے ایئرپورٹ پر پھنسے 120 پاکستانی زائرین کو وطن واپس بھیج دیا۔

واضح رہے کہ پاکستانی قافلے کو لے جانے والا شخص مسافروں کے پاسپورٹ دیر سے ایئرپورٹ لے کر پہنچا تھا جس کی وجہ سے زائرین وطن واپسی کی فلائٹ میں سوار نہیں ہوسکے تھے۔

بعدازاں مذکورہ شخص انہیں ٹکٹ اور پاسپورٹ دیے بغیر مسافروں کو بے سرو سامانی کے عالم میں چھوڑ کر فرار ہوگیا تھا جس کے باعث پاکستانی مسافر گزشتہ 4 روز سے ایئرپورٹ پر محصور تھے۔

جس پر زائرین نے حکومت پاکستان سے مدد کرنے کی اپیل کی تھی چنانچہ عراق میں موجود پاکستانی سفارت خانے نے فوری طور پر ایئرپورٹ پر پھنسے ہوئے مسافروں کی وطن واپسی کے لیے اقدامات کیے۔

اس حوالے سے ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ سفارتخانے نے فوری طور پر مشکل کا شکار پاکستانیوں کو خوراک پانی اور ادویات فراہم کی اس کے ساتھ گروپ کے سربراہ سے بھی رابطہ کیا اور ان پر زائرین کی رہائش اور ٹکٹ کا انتظام کرنے کے لیے دباؤ ڈالا۔

ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ عراق میں موجود پاکستانی سفارت خانہ ایئرپورٹ پر پھنسے ہوئئے زائرین کی مسلسل دیکھ بھال کررہا تھا۔

بعد ازاں ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل نےسماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ٹوئٹ کر کے بتایا کہ تمام عراق میں موجود سفارتخانہ تمام پھنسےہوئے زائرین کو وطن واپس بھیجنے میں کامیاب ہوگیا ہے۔

ترجمان نے زائرین کی وطن آمد کا خیر مقدم بھی کیا اور پاکستانی سفیر ساجد بلال اور سفارتی عملے کی محنت کو سراہا۔

ان کا کہنا تھا کہ مذکورہ ٹور آپریٹر کے خلاف کارروائی کا اعلان کردیا گیا ہے جس کی ناقص کارکردگی کے باعث پاکستانیوں کو مشکلات پیش آئیں۔

آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎

?>