خیبرپختونخوا میں 3 روزہ انسداد پولیو مہم 12 نومبر سے شروع ہوگی

خیبر پختو نخوا کے محکمہ صحت نے 18 اضلاع میں 12 نومبر سے تین روزہ انسداد پولیو مہم چلانے کی منصوبہ بندی کر لی ہے جس میں پانچ سال سے کم عمر کے 46 لاکھ 43 ہزارسے زائد بچوں کو پولیو سے بچائو کے قطرے پلائے جائیں گے جبکہ پشاور میں ساڑھے سات لاکھ بچوں کو حفاظتی قطرے پلانے کا ہدف رکھا گیا ہے۔

ایمر جنسی آپر یشن سینٹر کے کوارڈی نیٹر محمد عابد خان کے مطابق 12 نومبر سے صوبے کے18 اضلاع پشاو، چاسدہ، نوشہرہ، مردان، صوابی، ملاکنڈ، سوات، لوئردیر، اپردیر، بٹ گرام، چترال ، بنوں ، کوہاٹ، ٹانک، ہنگو، کرک، لکی مروت اورڈیرہ اسماعیل خان میں تین روزہ انسداد پولیو مہم چلائی جائے گی۔

مہم کے دوران مقامی آبادی کے ساتھ ساتھ یہاں پر قائم افغان مہاجرین اور ٹی ڈی پیز کے کیمپس میں بھی بچوں کو حفاظتی قطرے دئیے جائیں گے۔

یہ بھی پڑھیں: پولیو وائرس کس طرح بچوں سے جینے کا حق چھینتا ہے

اس مہم کے دوران پانچ سال سے کم عمر کے 46 لاکھ 43 ہزار652 بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے۔

تر بیت یا فتہ پولیو ورکزر پر مشتمل21 ہزار 138 ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں جن میں 15 ہزار70 موبائل ٹیمیں، ایک ہزار175 فکسڈ ٹیمیں، 799 ٹرانزٹ ٹیمیں اور 149رومنگ ٹیمیں شامل ہیں۔

مہم کی موثر نگرانی کے لئے 3 ہزار945 ایریا انچا رجز کی تعیناتی عمل میں لائی گئی ہے۔ انسداد پولیومہم کے دوران پولیس اوردیگر قا نون نافذ کرنے والے اداروں کے تعاون سے سیکو رٹی کے خاطر خواہ انتظامات بھی کئے جائیں گے۔

آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎

?>