سروسزہسپتال میں بے ہوش خاتون سے اجتماعی زیادتی کا واقعہ، حقیقت کیا نکلی؟ جانیے

کچھ روز قبل غزالہ نامی خاتون نے یہ دعویٰ کیا تھا کہ لاہور کے سروسز ہسپتال میں کچھ عرصہ قبل آپریشن کے دوران ڈاکٹرز نے اسے بےہوشی کی حالت میں زیادتی کا نشانہ بنایا ہے جس کے تحت وہ حاملہ ہو گئی ہے.


تاہم اس منفرد معملے کی جانچ پڑتال کے بعد پولیس کو میڈیکل رپورٹ موصول ہو گئی ہے جس میں متاثرہ خاتون کے ساتھ زیادتی ثابت نہیں ہوئی.

پولیس نے میڈیکل رپورٹ کی روشنی میں کسی شخص کو گرفتار نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے امکان ہے کہ پولیس اب یہ مقدمہ خارج کر دے گی.

میڈیکل انکوائری ٹیم کے سامنے متاثرہ خاتون غزالہ بھی پیش ہوئی اور اپنا بیان ریکارڈ کروایا.

ہیلتھ رپورٹر کے مطابق محکمہ صحت کی انکوائری کمیٹی کو بھی خاتون سے زیادتی کے کوئی شواہد نہیں ملے .تاہم  ینگ ڈاکٹرز نے اس حوالے سے خاتون کے خلاف عدالت میں ہتک عزت کا کیس دائر کرنے کا فیصلہ کیا ہے.



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎