وزیراعظم ہاؤس سے نکالے گئے524 ملازمین کے ساتھ کیسا برتاؤ کیا ؟جان کر آپ بھی کپتان کی پالیسیوں کوسلام پیش کریں گے

تحریک انصاف کی حکومت شروع میں کیے ہوئے عوامی وعدوں کی بدولت تنقید کی زد میں ہے جس کی وجہ سے کچھ حلقوں میں حکومتی کارکردگی کو سراہا نہیں جا رہا لیکن وزیراعظم عمران خان کے کچھ فیصلے ایسے بھی ہیں جنہیں عوام نے من و عن سے قبول کیا ہے.

اپنی پہلی تقریر میں خان صاحب نے وزیراعظم ہاوس میں نہ رہنے کا اعلان کیا تھا اور اپنے اس فیصلے کے نتیجے میں وہ شاہانہ طرز کا وزیراعظم ہاوس چھوڑ کر4 کنال اور تین بیڈ روم پر مشتمل سیکٹری اسٹیبلشمنٹ کے گھر منتقل ہوگئے.

تاہم اس نتیجے میں وزیراعظم ہاوس میں موجود عملہ جو ماضی میں وزیراعظم حضرات کی خدمت پر معمور کیا جاتا تھا وہ بھی اپنے کام کا نہ رہا بجاے اس کے کہ انکو گھر واپس بھیج دیا جاتا اور انکی ملازمت ختم کر دی جاتی وزیراعظم عمران خان نے 524 ملازمین میں سے صرف چند ملازمین کے علاوہ تمام ملازمین کو وزیراعظم ہاوس سے فارغ کر کے مختلف سرکاری محکموں کے حوالے کر دیا.

اس فیصلے سے عمران خان کا عوام سے کیا گیا وعدہ بھی پورا ہو گیا اور وزیراعظم ہاوس کے پانچ سو سے زائد ملازمین بے روزگار ہونے سے بھی بچ گئے.

آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎