زمین پر وہ واحد جگہ جو چاند سے بھی نظر آتی ہے۔

پاکستان اور چین کی دوستی کو پہاڑوں سے بلند سمندر سے گہری اور شہد سے میٹھی کہا جاتا ہے تاہم چینی عوام کی پاکستان اور پاکستانیوں سے محبت عظیم دیوار چین کی بلندیوں پر بھی محسوس کی جاسکتی ہے ۔

دیوار چین دنیا کا قدیم عجوبہ ہے جس کی تعمیر قبل ازمسیح سے شروع ہوکر 1644عیسویں میں مکمل ہوئی، بیرونی حملہ آوروں کے ڈر سے بنائی گئی 8852کلومیٹر طویل یہ دیوار چین کے 15 صوبوں میں پھیلی ہوئی ہے دارالحکومت بیجنگ میں ہی اس کی لمبائی 600کلومیٹر سے زائد ہے۔

دیوار چین سینکٹروں سال پرانی ہے لیکن اس کی خوبصورتی آج بھی برقرار ہے یہ دنیا میں ایک عجوبہ ہے، دیوار چین زمین پر واحد جگہ ہے جو چاند سے بھی نظر آتی ہے۔

دیوار چین پر کھڑے پاک چین دوستی کے نعرے لگاتے چینی شہری دونوں ملکوں کی ہمالیہ سے بلند اور شہد سے میٹھی دوستی کا چلتا پھرتا ثبوت ہیں۔

اس عظیم دیوار کی تعمیر میں چاول کا آٹا استعمال ہوا جو ان اینٹوں کو آج ہزاروں سال بعد بھی پختگی سے جوڑے ہوئے ہے یہ دیوار چینی قوم کے جذبہ محنت کی زندہ مثال ہے۔

یہ کافی ہارڈ ورکنگ قوم ہے انہوں نے اتفاق رائے کیا اصلاحات لائے اور محنت کی جو ہر جگہ نظر آتی ہے آج ہم دیوار چین پر کھڑے ہیں اسے دیکھ کر پتہ چلتے ہے کہ یہ اتنے ہزار سال پہلے بھی محنتی لوگ تھے۔

آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎