پاکستان میں بھی غریب لڑکیوں کی عزت غیر محفوظ ہونے لگی ایسی خبر آگئی کہ آپ بھی دم بخود رہ جایئں گے

پاکستان جیسے مسلم ملک میں بھی غریب اور لاچار لڑکیوں کو درندگی کا نشانہ بنائے جانے اور ان کے غیر محفوظ ہونے کا انکشاف ہوا ہے. میڈیا رپورٹس کے مطابق  کراچی میں غریب اور بے سہارا لڑکیوں کو نشے کا عادی بنا کر ان کو فروخت کیے جانے کے کاروبار کا انکشاف ہوا ہے۔

اس گھناؤنے گینگ سے بچ نکلنے والی ایک لڑکی نے اس متعلق ساری روداد سنائی. متاثرہ لڑکی کی عمر ابھی 19 سال ہے اور اسکا تعلق  کراچی کے علاقہ گلستان جوہر سے ہے. متاثرہ لڑکی نے اس متعلق بتاتے ہوۓ کہا کہ کچھ لوگوں نے پہلے مجھے نشے کا عادی بنایا اور پھر مجھے شہر شہر فروخت کیا گیا.

متاثرہ لڑکی نے بتایاکہ کچھ لوگ شہر میں اس گھناؤنے کام میں کافی متحرک ہیں جو لڑکیوں کو نشے کا عادی بنانے کے بعد ان سے ویڈیو بنواتے اور غلط کام کرواتے ہیں. جب ان لڑکیوں کو نشہ نہیں ملتا تو وہ غلط کام کرنے پر راضی ہو جاتی ہیں. متاثرہ لڑکی نے بتایا کہ پانچ رکنی گروہ نے اسے 50 ہزار روہے کے عوض مانسہرہ میں فروخت کیا.

ملزمان غریب لڑکیوں کی ویڈیوز کو انٹرنیٹ پر اپ لوڈ کرنے کی دھمکیاں بھی دیتے تھے۔ متاثرہ لڑکی نے کہا کہ اس گروہ کے شکنجے میں مزید کئی لڑکیاں پھنسی ہوئی ہیں جبکہ کئی لڑکیوں کو بلیک میل بھی کیا جا چکا ہے.

جبکہ  پولیس کا دعویٰ ہے کہ مرکزی ملزم غلام رضا کو گرفتار بھی کر لیا گیا ہے.مزید ملزمان کی گرفتاری کے بعد صورتحال واضح ہوجائے گی.

 

آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎