وزیراعظم نے فیس بک انتظامیہ سے بڑا مطلبہ کر دیا

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے سماجی رابطے کی معروف ویب سائٹ فیس بک کی انتظامیہ پر زور دیا ہے کہ وہ جھوٹی خبریں، تشدد اور نفرت آمیز مواد پھیلانے کے لیے سوشل میڈیا کے غلط استعمال کی روک تھام کے لیے اپنا کردار ادا کرے۔


ان کا مزید کہنا تھا کہ فیس بک استعمال کرنے والے افراد کی بڑی تعداد ہونے کی وجہ سے ہمارے معاشرے کو لاحق منفی خطرات پر نظر رکھنے میں اہم کردار ادا کرسکتی ہے۔

ملاقات میں وزیراعظم کے معاونِ خصوصی سید ذوالفقار عباس بخاری، اور افتخار درانی سمیت دیگر اعلیٰ عہدیدار موجود تھے۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ فیس بک کے پاس پاکستان میں سماجی خدمات کے شعبے میں آن لائن کمیونٹی بنانے کے بہت مواقع موجود ہیں، خاص کر کمیونٹی ہیلتھ سروسسزاور ملک کے دور دراز علاقوں میں صحت سے آگاہی کے مہمات وغیرہ۔

اس موقع پر سائمن مِلنر نے وزیر اعظم عمران خان کو فیس بک کی جانب سے آن لائن کمیونٹیز کے قیام، دور دروز بسنے والے معاشروں تک رسائی، صحت عامہ کی سہولیات کی فراہمی میں مدد، قدرتی آفات کی صورت میں ریسپانس اور سوشل میڈیا کا غلط استعمال روکنے کے لیے اٹھائے جانے والے متعدد اقدامات سے آگاہ کیا۔

اس کے ساتھ وزیر اعظم عمران خان نے معروف ماہر تعلیم ڈاکٹر عطاالرحمٰن کے ساتھ ملاقات میں ٹیکنالوجی کے حوالے سے ایک ٹاسک فورس تشکیل دینے کا بھی اصولی ٖفیصلہ کیا۔

دفتر وزیراعظم کی جانب سے جاری کردہ ایک پریس ریلیز میں بتایا گیا کہ ٹاسک فورس میں اہم سائنسدان، انجینئرز، وفاقی، صوبائی حکومتوں اور نجی شعبے کے نمائندے شامل ہوں گے۔

اس حوالے سے وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ملک کو دانشوروں کا مرکز بنانا اور انسانی وسائل کی ترقی حکومت کے بنیادی ترجیحات میں شامل ہے۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎