میرے دورمیں ڈالرپوچھے بغیر10 پیسے بھی اوپرنہیں جاتا تھا جبکہ۔۔۔ نواز شریف نے ایک بارپھرحکومت کو نشانے پردھرلیا

سابق وزیراعظم نوازشریف نے کہاہے کہ ہمارے دور میں ڈالر بغیر پوچھے تو دس پیسے بھی اوپر نہیں جاتا تھا ، کہتے ہیں کہ ڈالر مصنوعی طریقے سے برقرار رکھا تو یہ بھی رکھ لیں اور وہ طریقہ بھی ہمیں بتا دیں، ہمارے چار سال میں ڈالر اتنا نہیں بڑھا جتنا یہ چند ماہ میں ہو گیا ہے ، ملکی معیشت یوٹرن نہیں ، کام کرنے سے مستحکم ہوتی ہے۔

نوازشریف احتساب عدالت میں پیش ہونے کیلئے آئے تو صحافیوں نے انہیں گھیر لیا اور سوال شروع کر دیے ، اس موقع پر نوازشریف نے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کہتے ہیں کہ ڈالرمصنوعی طریقے سے برقرار رکھا تو یہ بھی رکھ لیں اور یہ بھی بتا دیں کہ ڈالر کی قیمت برقرار رکھنے کیلئے وہ مصنوعی طریقہ کار کریا ہے ،ملکی معیشت کیلئے کرنسی کومستحکم ہونا چاہیے دنیا 2013 سے 2017 تک معیشت کو مضبوط اور متوازن کہتی تھی ، ہم سٹاک ایکس چینج کو 19 ہزار سے 53 ہزار پر لے کر گئے ،ہمارے دورمیں ٹماٹر 20 روپے کلوتھا ،اب 200 سے زیادہ ہے ۔

ان کا کہناتھا کہ آئی ایم ایف رپورٹ کے مطابق ہمارے دور میں معیشت کی گروتھ 6.6 رہی، دنیا میں پٹرول کی قیمتیں کم ،یہاں بڑھ جاتی ہیں۔نوازشریف کا کہناتھا کہ شہبازشریف پہلی مرتبہ کراچی گئے اور فیصل واوڈا پانچ و وٹوں سے جیتے ، وہ بھی آپ کو پتاہے کہ کیسے جیتے ہیں ، فافن رپورٹ پڑھ لیں

آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎