فرحت اللہ بابر کا عمران خان سے معافی کا مطالبہ کرنے کی بڑی وجہ سامنے آگئی

پیپلز پارٹی کے رہنما فرحت اللہ بابر نے کہا ہے کہ 26 ممالک سے اثاثوں کی معلومات کے تبادلے پر حقیقت آخر سامنے آ گئی، ان ممالک سے معلومات کے تبادلوں کےمعاہدے پر اسحاق ڈار نے دستخط کیے تھے،عمران خان غلط بیانی کرکے اس معاہدے کا کریڈٹ حاصل کر رہے ہیں، عزت نفس کا تقاضہ ہے کہ اس معاملے پر معافی مانگی جائے۔


خیال رہے کہ وزیراعظم نے گزشتہ دنوں اپنے انٹرویو میں کہا تھا کہ پاکستانیوں سے متعلق معلومات حاصل کرنے کیلئے 26 ممالک کےساتھ معاہدوں پردستخط کیے گئے ہیں۔

کرپشن پر قابو پائے بغیر ملک ترقی نہیں کر سکتا: وزیراعظم عمران خان

عمران خان نے کہا تھا کہ ان 26 ممالک سے اب تک جوڈیٹا آیا ہے اس کے مطابق پاکستانیوں کے 11 ارب ڈالرز بینکوں میں پڑے ہیں۔ انہوں نے کہا تھا کہ دبئی اور سعودی عرب سے بھی ریکارڈ منگوایا ہے، سعودی عرب اور دبئی نے اقامہ ہولڈرز کی معلومات نہیں دی۔

عمران خان نے کہا تھا کہ پاکستانیوں کو یقین دلاتا ہوں آنے والے دنوں میں ملک میں ڈالرز کی کمی نہیں ہوگی۔

پاکستان کی فوج پی ٹی آئی کے منشورکے ساتھ کھڑی ہے، وزیراعظم

اس حوالے سے اب رہنما پی پی پی فرحت اللہ بابر نے سوشل میڈیا پر بیان جاری کیا ہے جس میں انہوں نے کہا ہے کہ ‎26 ممالک سے اثاثوں کی معلومات کے تبادلوں کےمعاہدے پر اسحاق ڈار نے دستخط کیے تھے، اس پر پی ٹی آئی حکومت نے دستخط نہیں کیے۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎