چیف جسٹس نے علیمہ خان کیس کا فیصلہ سنا دیا

چیف جسٹس ثاقب نثار نے وزیراعظم عمران خان کی ہمشیرہ علیمہ خان کے کیس کی سماعت کی. جس میں چیف جسٹس نے اپنا فیصلہ سناتے ہوۓ کہا کہ اگر علیمہ خان 2 کروڑ 29 لاکھ روپے جمع نہ کروائیں توان کی جائیداد ضبط کر لیں.


چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ  اپیل میں جانے سے پہلے 2.94کروڑ روپے جمع کروانے ہوں گے اور اگر اپیل منظور ہوتی ہے تو پھر 2.94 کروڑ روپے واپس ہو جائیں گے.

علیمہ خان کے وکیل سلمان اکرم راجہ نے دلائل دیتے ہوۓ کہا کہ علیمہ خان نے 2008 میں جائیدادیں خریدں ، جائیداد کیلئے رقم بینکنگ چینل کے ذریعے دبئی بھیجی گئی.

علیمہ خان نے چیف جسٹس کے رو برو پیش ہو کر کہا کہ دبئی میں جائیداد 2008 میں تین لاکھ 70 ہزار ڈالر میں خریدی جس کی آدھی رقم میں نے خود ادا کی جبکہ پچاس فیصد رقم کو بینک سے قرض لیا گیا.

کمشنر ایف بی آر بھی موقع پر موجود تھے جنہوں نے عدالت کو بتایا کہ علیمہ خان پر2 کروڑ 94 لاکھ روپے کے واجبات ہیں. جس پر چیف جسٹسنے حکم جاری کرتے ہوئے کہا کہ علیمہ خان فوری طور پر یہ رقم جمع کروائیں اور نہ کروانے کی صورت میں ان کی جائیداد ضبط کر لی جائے.



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎