قابض بھارتی فوج نے بالی ووڈ کشمیری اداکار کو شہید کردیا

بھارتی ریاستی دہشت گردی نے اپنی ہی فلم نگری کو ہلا کر رکھ دیا۔ قابض فوج نے بالی ووڈ فلم میں کام کرنے والے کشمیری نوجوان ثاقب بلال شیخ کو بھی شہید کردیاہے۔


بھارتی فوج نے نہتے کشمیری شہریوں کے ساتھ اداکاروں کو بھی نہ بخشا۔ بھارتی ذرائع ابلاغ سے جاری خبروں کے مطابق سال 2014 میں ریلیز ہونے والی بھارتی فلم حیدر میں شاہد کپور کے ساتھ کام کرنے والے اداکار ثاقب بلال شیخ کو قابض فوج نے آپریشن کی آڑ میں شہید کردیا۔ ثاقب بلال نے 3 سال قبل تھیٹر میں ہونے والا مقابلہ بھی جیتا تھا۔

ثاقب بلال نے دو ہزار چودہ میں ریلیز ہونے والی فلم "حیدر" میں عمدہ اداکاری کی تھی۔ بھارتی فوج نے اتوار کو سری نگر کے علاقے مجگند میں محاصرے کے دوران فائرنگ کرکے دو نوجوانوں کو شہید کیا تھا۔ دونوں نوجوانوں کو بھارتی فوج نے اُس وقت شہید کیا جب وہ فٹبال میچ کھیلنے کےلیے حاجن عیدگاہ پہنچے تھے۔

شہدا میں ثاقب بلال کے ساتھ اُس کا دوست مدثر رشید بھی شامل تھا۔ بیٹے کی شہادت پر ثاقب بلال شیخ کی والدہ نے انصاف مانگا ہے۔ یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ ثاقب بلال شیخ کا شمار ذہین طالب علموں میں ہوتا تھا۔ وہ اپنے علاقے میں اداکاری کے حوالے سے بھی مشہور تھا۔

دوسری جانب کشمیر میڈیا سروس کے مطابق دونوں نوجوانوں کو اتوار کے روز بھارتی فوج نے جعلی مقابلے میں شہید کیا۔ شہداء کے جنازے میں ہزاروں افراد نے شرکت کر کے نوجوانوں کو خراج عقیدت پیش کیا۔ مدثر رشید اور ثاقب بلال شیخ کے جنازے کے ساتھ بڑی تعداد میں شریک لوگوں نے مارچ کیا اور آزادی کے نعرے بھی لگائے۔

شہید ہونے والے دوسرے نوجوان مدثر رشید کا تعلق غریب گھرانے سے تھا اوروہ اپنے گھر والوں کا پیٹ پالنے کے لیے اسکول کے بعد مزدوری کرتا تھا۔ مدثر نے سوگواران میں بیمار والدین، معذور بھائی اور ایک دس سال کی بہن چھوڑی ہے۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎