ترجمان وزیراعلیٰ نے مریم نوازکا ٹویٹ غلط بیانی قرار دےدیا

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کے ترجمان شہباز گل نے نوازشریف کی طبیعت سے متعلق مریم نواز کے ٹویٹ کو غلط بیانی قراردے دیا۔


العزیزیہ ریفرنس میں احتساب عدالت سے 7 سات قید کی سزا پانے کے بعد کوٹ لکھپت جیل میں قید سابق وزیراعظم نوازشریف بیمار ہیں یا نہیں؟۔نئی بحث شروع ہوگئی ۔ پوزیشن نے بیماری کے معاملے پر جارحانہ رویہ اختیار کیا تو حکومت نے بیماری کی تردید کردی۔

ترجمان وزیراعلیٰ نے مریم نواز کا دعویٰ مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ جیل ڈاکٹر کے مطابق نوازشریف کا ای سی جی، بلڈ پریشر اور شوگر سب ٹھیک ہیں ۔ ذاتی معالج آج جیل جاکر معائنہ کرسکتے ہیں۔ مریم نواز کا تویٹ غلط بیانی ہے۔

دوسری جانب نواز شریف کے ذاتی معالج ڈاکٹرعدنان کے مطابق چیک اپ کےلیےجمعرات کومریم نوازکےساتھ کوٹ لکھپت جیل گیاتھا۔ نوازشریف کےبازومیں دردہے، انہیں اسپتال منتقل کرناپڑےگا۔ ڈاکٹرعدنان کا کہنا ہے کہ جیل حکام مجھےچیک اپ کی اجازت نہیں دےرہے۔۔

بھتیجی کے ٹویٹ کے بعد اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے بھی نواز شریف سے ذاتی معالج کو ملوانے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہاکہ نوازشریف کی صحت سے متعلق مسائل بڑھے تو حکومت ذمہ دار ہوگی۔

لیگی رہنماؤں مریم اورنگ زیب اور آصف کرمانی نے بھی تشویش کا اظہار کیا جبکہ احسن اقبال نے کہا کہ سابق وزیراعظم کو کچھ ہوا تو وزیراعظم اور وزیراعلیٰ کے خلاف مقدمہ درج کرائیں گے ۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز مریم نوازنے نواز شریف سے ملاقات کے بعد ٹویٹ کی تھی کہ ذاتی معالج سارا دن نوازشریف سے ملنے کی کوشش کرتے رہے لیکن اجازت نہیں دی گئی، میرے والد کے بازو میں درد ہےاورغالب امکان ہے کہ یہ انجائنا کا ہے۔ نوازشریف کو فوری طبی معائنے کی ضرورت ہے۔ معالجین کو ملنے کی اجازت دی جائے جو نواز شریف کی میڈیکل ہسٹری جانتے ہیں۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎