کراچی ایٹ فیسٹیول 2019: مختلف اقسام کے لذیذ کھانے پیش

کراچی ایٹ فیسٹیول (کے ای ایف) کا آغاز شہر قائد کے علاقے کلفٹن میں ساحل کے ساتھ ایک پارک میں ہوا جہاں عوام کی بڑی تعداد مقامی و بین الاقوامی لذیذ کھانوں کا ذائقہ لینے پہنچے۔


فیسٹیول کا انعقاد کرنے والے عمر عماری کا کہنا تھا کہ رواں سال اس فیسٹیول میں 95 کھانوں کے اسٹالز لگائے گئے ہیں جن میں سے 56 گھر کے بنے ہوئے کھانے یا نئے ابھرتے ہوئے کھانوں کا کاروبار کرنے والے افراد کے اسٹالز تھے جو اس فیسٹیول کا اصل مقصد ہیں‘۔

ان کا کہنا تھا کہ ماضی میں بھی کے ای ایف سے کئی کامیابیوں کی داستانیں سامنے آئی ہیں، جن میں ونگ اِٹ، دیسی گلی، جوسی لوسی وغیرہ شامل ہیں جنہوں نے اپنے کاروبار کا آغاز کے ای ایف کے ایک اسٹال سے کیا تھا اور بعد ازاں ایک بڑا کاروبار بن کر سامنے آئے۔

بابا مو بھی کراچی میں کھانے پینے کی دنیا میں ایک ایسی کامیاب کہانی ہے جس کا آغاز کراچی ایٹ فیسٹیول سے ہی ہوا تھا۔

بابا مو چلانے والے 2 بھائی عباد اور نبیل کا کہنا تھا کہ جب ہم نے گزشتہ سال کے ای ایف میں حصہ لیا تھا تو ہم کوئی ایسی چیز لانا چاہتے تھے جس کا ذائقہ کراچی نے پہلے کبھی نہ چکھا ہو اور ہمارے جیکٹ پوٹیٹو اور بہترین ٹاپنگ سے ہمیں اتنی امید نہیں تھی کہ ہم اسے اتنا فروخت کریں گے تاہم اس کا نتیجہ اور عوامی رائے بہت اچھی رہی اور 3 دن کے لیے جو سامان ہم لائے تھے وہ صرف 5 گھنٹوں ہی میں فروخت ہوگیا تھا‘۔

ان دونوں بھائیوں نے 2 شراکت داروں کے ہمراہ مارچ میں اپنا پہلا ریسٹورینٹ بھی کھولا تھا۔

نبیل کا کہنا تھا کہ ’کراچی میں عوام نئی چیزیں کھانے کی بھوکی ہے اور کے ای ایف ایسے لوگوں کے لیے بہترین پلیٹ فارم ہے‘۔

عماری کے مطابق کے ای ایف منعقد کرنے کا فلسفہ یہ ہے کہ اسے شاندار لیکن عوام کی رسائی تک لانا ہے۔

ان کا کہنا تھا کے ای ایف کے اس فلسفے سے تمام شعبہ جات زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد ایک ساتھ ایک جگہ پر اکھٹے ہوتے ہیں جو ہم نے کے ای ایف کے پہلے روز دیکھا۔

کے ای ایف کے لیے پارکنگ میپ، پروگرامز اور اسٹالز کی فہرست فیسٹیول کے فیس بک پیج پر دیکھا جاسکتا ہے۔

کراچی ایٹ فیسٹیول 2019 آج (ہفتہ) اور کل (اتوار) بھی دن 12.30 سے رات 10.30 تک جاری رہے گا۔

یہ خبر ڈان اخبار میں 12 جنوری 2019 کو شائع ہوئی



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎