شیخ رشید کا پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا چیئرمین بننے کی خواہش کا اظہار

لاہور: پاکستان عوامی مسلم لیگ کے سربراہ اور وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید کا کہنا ہے کہ وہ پبلک اکاؤنٹس کمیٹی(پی اے سی) کی چیئرمین شپ کے حصول کے لیے وزیراعظم عمران خان کو خط لکھیں گے اور تحریک انصاف سے مطالبہ کریں گے کہ اپنے رکن کو خارج کر کے انہیں کمیٹی میں شامل کیا جائے۔


انہوں نے کہا کہ میں شہباز شریف کی چیئرمین شپ کے خلاف سپریم کورٹ میں درخواست دائر کروں گا وہ صرف رکن کی حیثیت سے کمیٹی کے رکن رہیں۔

انہوں نے کہا چیئرمین بن کر میں خود نواز شریف اور شہباز شریف کا احتساب کروں گا, شہباز شریف پر ماڈل ٹاؤن، صاف پانی کمیشن، نندی پور، ملتان میٹرو، آشیانہ ہاؤسنگ کیس سمیت متعدد کیسز ہیں چناچہ اخلاقی ذمہ داری سمجھتے ہوئے انہیں چاہیے کہ یہ عہدہ نہ لیں۔

ان کا کہنا تھا کہ میں ایک الگ جماعت کی نمائندگی کرتا ہوں اور سینئر ترین رکنِ اسمبلی کی حیثیت سے پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا چیئرمین بن سکتا ہوں آئین اور قانون میں اس پر کوئی پابندی نہیں۔

ملک میں جاری احتسابی عمل کے حوالے سے اپوزیشن کے اعتراضات کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ ملک میں ہر طرف کرپشن ہے اگر آج اپوزیشن کا احتساب ہورہا ہے تو کل کو ہمارا بھی ہوسکتا ہے، احتساب کرنے والے کو کوئی پسند نہیں کرتا۔

قبل ازیں وزیر ریلوے نے روہڑی اسٹیشن پر ایک نیا پلیٹ فارم بنانے کا اعلان کیا جسے سندھی ثقافت سے مزین کیا جائے گا، ان کا کہنا تھا کہ ریلوے کو ایک ہفتے میں بغیر ٹکٹ کے 3 کروڑ روپے کی آمدنی ہورہی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ بغیر ٹکٹ سفر کی اجازت دینے والے افسران کو موقع پر ہی معطل کردیا جائے گا اس کے لیے ریلوے پولیس کو خصوصی اختیارات دے دیے ہیں جبکہ رات دیر تک ٹکٹوں کی فروخت کے آغاز کے بعد سے 41 ہزار ٹکٹیں زیادہ فروخت ہوئیں۔

انہوں نے 2 مزید ٹرینیں چلانے کا اعلان کرتےہوئے کہا کہ 15 نئی ریل گاڑیاں چلانے کا ہدف تقریباً پورا ہوچکا ہے اور 3 ماہ پہلے ٹکٹ خریدنے کی سہولت بھی متعارف کروادی گئی ہے۔

تیل کی قیمتیں کم ہونے کے باوجود کرایوں میں اضافے کے حوالے سے ان کا کہنا تھا ٹکٹ کی قیمتوں کے لیے 3 کیٹیگری بنادی گئی ہیں اب لوگوں پر منحصر ہے کہ وہ کتنے کا ٹکٹ لے کر سفر کرنا چاہتے ہیں تاہم میں ریل گاڑیوں میں فائیو اسٹار سہولیات متعارف کروانے جارہا ہوں۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎