میرٹ پر وفاقی حکومت ہمارے ایک مرادعلی شاہ کا مقابلہ نہیں کرسکتی، بلاول بھٹو

پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ ’وفاقی حکومت میرٹ کی بات کرتی ہے، میرٹ پر وہ ہمارے ایک مراد علی شاہ کا بھی مقابلہ نہیں کرسکتے‘۔


انہوں نے گزشتہ سال ہونے والے انتخابات پر الزامات لگاتے ہوئے کہا کہ تحریک انصاف کو دھاندلی کرکے حکومت ملی۔

کوٹری میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ’عمران خان نے حکومت تو حاصل کرلی لیکن عوام کا اعتماد حاصل کرنے میں ناکام ہوگئے ہیں‘۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ پیپلز پارٹی نے صرف اور صرف عوام کی خدمت کی اور کہا کہ ’ہمیں عوام کی خدمت کرنے کی سزا دی جارہی ہے‘۔

ان کا کہنا تھا کہ ’سندھ کے لوگ پیپلزپارٹی سے محبت کرتے ہیں، پیپلزپارٹی کے جیالوں کو مت للکاریں‘۔

چیئر مین پی پی پی کا کہنا تھا کہ ’حکومت جتنا آگے جارہی ہے ملک اتنا ہی پیچھے جا رہا ہے، معیشت کا برا حال ہوگیا ہے، عوام مہنگائی سے تنگ ہیں، ملک میں غریبوں کے گھر کے چولہے ٹھنڈے ہورہے ہیں‘۔

ان کا کہنا تھا کہ ’جنہوں نے 50 لاکھ گھر دینے تھے انہوں نے لوگوں کے سر سے چھت تک چھین لی ہے‘۔

انہوں نے بتایا کہ منتخب حکومت کے 6 ماہ کے دوران بیرون ملک سے 10 ارب 72 کروڑ ڈالر پاکستان بھیجے گئے۔

بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ حکومتی وزیر کہتے ہیں کہ مہنگائی کم ہوئی ہے جبکہ عوام 2 وقت کی روٹی کے لیے مارے مارے پھر رہے ہیں۔

انہوں نے وفاقی حکومت پر الزام لگایا کہ انہوں نے سندھ کا پانی اور بجلی بند کردیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ’حکومت کو پگڑیاں اچھالنے کے علاوہ کچھ نہیں آتا‘۔

جعلی اکاؤنٹس کیس میں بلاول بھٹو زرداری کے والد آصف علی زرداری اور فریال تالپور کے خلاف بنی جے آئی ٹی کی رپورٹ کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ ’ہم کسی جعلی جھوٹی جے آئی ٹی کو نہیں مانتے‘۔

ان کا کہنا تھا کہ ’پیپلز پارٹی انتقامی سیاست کا کڑا مقابلہ کرے گی‘۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎