نواز شریف کے ذاتی معالج کو جیل میں معائنے کی اجازت مل گئی

نوازشریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان کو کوٹ لکھپت جیل میں ان کے معائنے کی اجازت مل گئی ، کارکن اجازت ملنے تک جیل کے باہر احتجاج کرتے رہے، پارٹی رہنما بھی قائد سے اظہار یکجہتی کے لیے پہنچے ۔


نوازشریف کی طبیعت خراب ہونے کی اطلاعات پر ن لیگ کے رہنما بھی جیل پہنچ گئے احسن اقبال کہتے ہیں حکومت جان بوجھ کر نوازشریف اور شہبازشریف کو سہولتیں نہیں دے رہی ۔

رہنما مسلم لیگ ن احسن اقبال نے کہا کہ نوازشریف کو کچھ ہوا تو اس کے ذمہ دار وزیراعظم ہوں گے۔

متوالوں کے نعروں میں شدت آئی تو حکام نے نوازشریف کے ذاتی معالج ڈاکٹرعدنان کو ملاقات کی اجازت دے دی ، ن لیگ کا مطالبہ ہے کہ جیل میں مستقل چیک اپ کا بندوبست کیا جائے ۔

مصدق ملک کا کہنا تھا کہ ہم یہ نہیں کہتے کہ انہیں اسپتال منتقل کریں لیکن چیک اپ تو ہوتا رہنا چاہئے۔

ڈاکٹرعدنان کو ملاقات کی اجازت ملنے کے بعد رہنماؤں کی ہدایت پر کارکنوں نے احتجاج ختم کردیا ۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎