مالیاتی پیکج مکمل طور پر عوام کی بہتری کیلئے ہے، اسد عمر

اسلام آباد: (دنیا نیوز) وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے کہا ہے کہ روڈ میپ کی کل ابتدا ہوئی ہے لیکن ابھی بہت مزید کام کرنا ہے، دنیا بہت آگے نکل چکی ہے، نوجوانوں کو جو مواقع ملنا تھے ابھی تک نہیں مل رہے۔


اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیر خزانہ اسد عمر نے کہا کہ دوست ممالک نے ہمیں بہت زیادہ سپورٹ کیا، صورتحال کی بہتری کے لیے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات کیے، جو خطرے کی گھنٹی بج رہی تھی وہ رک گئی ہے، اگلے دو ہفتوں کے اندر مزید حالات بہتر ہوں گے۔

وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ پچھلی حکومت خسارہ چھوڑ کر گئی، جب حکومت سنبھالی تو خطرناک صورتحال تھی، بجٹ خسارہ خطرناک حد تک پہنچ چکا تھا، زرمبادلہ کے ذخائر تیزی سے گر رہے تھے۔ دو ارب ڈالر ماہانہ اور 19 ارب ڈالر کے مجموعی خسارے کی ماضی میں مثال نہیں ملتی۔

ان کا کہنا تھا کہ اکیس کروڑ افراد کی معیشت میں بہتری کے لیے وقت درکار ہے۔ معیشت کی بنیادوں کو ٹھیک کیے بغیر ترقی نہیں کر سکتے، 2019ء کے فنانسنگ گیپ پورا کرنے کے انتظامات کر لیے ہیں، پانچ سال بعد معیشت کے اندر بہتری نظر آئے گی۔

انہوں نے بتایا کہ ملکی برآمدات 70 فیصد درآمدات کے برابر تھیں جو آج صرف 40 فیصد رہ گئی ہیں۔ معاشی ترقی کے لیے جی ڈی پی کے تناسب سے سرمایہ کاری کی شرح 30 فیصد درکار ہے۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎