موٹاپے کے دشمن 5 مشروبات

عمر کے کسی حصے میں بھی موٹاپا جسمانی خصورتی کو ختم کرتا ہے بلکہ یہ مختلف امراض کا باعث بھی بنتا ہے۔ اگر آپ موٹاپے کی پریشانی اور روز مرہ مصروفیات کی وجہ سے غذائی ترتیب کو اپنا نہیں سکتے تو مشروبات بھی موٹاپے سے نجات دلا سکتے ہیں۔ ان میں سے یہ پانچ بہت زیادہ موثر ثابت ہوتے ہیں۔


اگر کہا جائے کہ سبز چائے موٹاپے کا دشمن ہے تو غلط بات نہیں ہو گی۔ سبز چائے برسوں سے مختلف فوائد کے لیے استعمال کی جا رہی ہے۔ اگرچہ گرین ٹی سے چند پونڈ وزن ہی کم ہوتا ہے تاہم یہ آپ کی خوراک میں زبردست اضافہ ثابت ہوتی ہے۔ روزانہ ایک کپ سبز چائے کا استعمال آپ کو تمام اینٹی آکسیڈنٹ فراہم کرتا ہے اور میٹابولزم کو بڑھا کر چربی جلانے کا عمل تیز کر دیتا ہے۔ لیکن خیال رہے کہ سبزچائے میں چینی کے استعمال سے گریز کریں۔

ماہرین طب کے مطابق سبزیوں کے جوس کے استعمال سے ہارمونز لیول متوازن ہوتے ہیں اور متعدد کئی بیماریوں کا خطرہ بھی کم ہوجاتا ہے۔ اس حوالےسے کہا جاتا ہے کہ اگر مختلف سبزیوں کو الگ الگ یا ملا کر استعمال کیا جائے تو یہ موٹاپے کی جنگ میں بہت موثر ہتھیار ثابت ہوتا ہے جبکہ اس سے جسم میں نقصان دہ مواد بھی ختم ہوتا ہے

ڈیٹوکس جوسز اضافی وزن میں کمی کے خلاف جنگ میں موثر ہتھیار ثابت ہوتا ہے، اسے سنگترے اور سبزیوں یا ان دونوں کے امتزاج سے با آسانی تیار کیا جا سکتا ہے۔ خاص طور پر چکوترے اس حوالے سے بہت طاقتور ڈیٹوکس ثابت ہوتا ہے جو جسم کے اندر سے تمام زہریلا مواد ختم کر دیتا ہے۔ اس کے علاوہ ادرک، گاجریں یا سیب بھی اس حوالے سے بہت موثر ثابت ہوتے ہیں کیونکہ اس سے نظام ہاضمہ زیادہ کام کرنے لگتا ہے، اس طرح یہ جسمانی وزن کا سب سے تیز اور قدرتی طریقہ ہے۔

پھلوں کا جوش مزیدار، بنانے میں آسان اور غذائیت، وٹامنز اور منرلز سے بھر پور ہوتا ہے، اگرچہ سینکڑوں پھلوں کا جوس بنا کر استعمال کیا جاسکتا ہے مگر کرین بیری اور ناشپاتی ایسے 2 پھل ہیں جو سب سے زیادہ مزیدار، زیادہ موثر اور وٹامن سی کی مقدار جسم تک پہنچانے میں مددگار ثابت ہوتے ہیں۔ یہ نہ صرف جسمانی وزن کم کرنے میں مددگار ثابت ہوتے ہیں بلکہ یہ جسمانی توانائی بڑھاتے ہیں اور جسم کو درکار تمام ضروری وٹامنز اور پروٹینز بھی فراہم کرتے ہیں۔

سب سے آخر میں دنیا کے مقبول ترین مشروبات میں سے ایک بلیک کافی موجود ہے، جس کے متعدد طبی فوائد ہیں، جو نہ صرف مختلف اقسام کے کینسر کا خطرہ کم کرتی ہے بلکہ اس کے ساتھ ساتھ یہ میٹابولزم کو بڑھا کر چربی گھلانے کا عمل بھی تیز کر دیتی ہے۔ یہ تلخ مشروب ذیابیطس اور امراض قلب کے خطرے کی روک تھام کیلئے بھی مفید ہے۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎