وزیر اعظم عالمی کانفرنس میں شرکت کیلئے دبئی روانہ

وزیر اعظم عمران خان ایک روزہ دورے پر دبئی روانہ ہو گئے جہاں وہ عالمی حکومتی کانفرنس میں شرکت کریں گے۔


حکومتی سربراہان، پالیسی سازوں اور ماہرین کی سالانہ کانفرنس میں اصلاحات، جدت اور ٹیکنالوجی کی مدد سے حکومت کو بہتر بنانے کے معاملات پر بحث کا موقع ملے گا۔

دفتر خارجہ کے مطابق عمران خان متحدہ عرب امارات کے وزیر اعظم شیخ محمد بن راشد المکتوم کی دعوت پر دبئی کے دورے پر گئے ہیں۔

دورے کے دوران وزیراعظم کی پاکستان انٹرنیشنل مانیٹری (آئی ایم ایف) کی سربراہ کرسٹین لاگارڈے سے بھی ملاقات متوقع ہے جس میں پاکستان کو دیے جانے والے بل آؤٹ پروگرام کی شرائط پر گفتگو کی جائے گی جبکہ وہ متحدہ عرب امارات کے ولی عہد اور دیگر اعلیٰ قیادت سے بھی ملاقات کریں گے۔

وزیر اعظم کے ساتھ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور وزیر خزانہ اسد عمر بھی موجود ہیں۔

کانفرنس کے دوران اپنے خطاب میں وزیر اعظم مضبوط اور خوشحال پاکستان کے اپنے وژن کو پیش کر کے شرکا کی پاکستان معیشت کے مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری کے لیے حوصلہ افزائی کریں گے۔

ممتحدہ عرب امارات روانگی سے قبل وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ خطے خصوصاً پاکستان میں طرز حکمرانی ایک اہم مسئلہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ خراب طرز حکمرانی کے سبب اس وقت ملک کو متعدد مسائل کا سامنا ہے اور وزیر اعظم اداروں کی بہتری کے لیے اصلاحات اور تازہ ماڈل متعارف کرانے کے لیے کوشاں ہیں۔

آئی ایم ایف کے سربراہ سے ملاقات کے حوالے سے شاہ محمود قریشی نے کہا کہ حکومت کی کوشش ہے کہ آئی ایم ایف کے ساتھ ایسی شرائط کے ساتھ آگے بڑھے جس سے عوام پر کوئی ناروا بوجھ نہ پڑے۔

آئی ایم ایف نے پاکستان سے آئندہ تین سے چار سال میں 1600 سے 2 ہزار ارب روپے کی ایڈجسٹمنٹ کا مطالبہ کیا ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ پاکستان کی تاریخ کے سب سے بڑے کرنٹ اکاؤنٹ خسارے کو دیکھتے ہوئے مثبت اقدامات کرنے کا بھی مطالبہ کیا گیا ہے تاکہ پاکستانی معیشت کو درست راہ پر لایا جا سکے۔

تاہم مذاکرات میں سب سے بڑا مسئلہ موجودہ اخراجات میں ایڈجسٹمنٹ کی رفتار ہے اور ایک مذاکرات میں شریک ایک سینئر حکام نے کہا کہ اخراجات میں کمی کی گنجائش موجود ہے جس سے پاکستان بہتر پوزیشن میں ہو گا البتہ یہ سیاسی طور پر ایک مشکل فیصلہ ہو گا۔

موجودہ اخراجات میں کمی کے باعث حکومت کو شدید مسائل اور تنقید کا سامنا ہے جہاں اس نے مختلف شعبوں میں دی جانے والی سبسڈیز اور خصوصی گرانٹس میں کمی کی ہے۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎