پرائيويٹ ٹور آپريٹرزکا حکومت کے مقابلے ميں سستے حج پيکج کا اعلان

پرائیویٹ ٹورآپریٹرزکی تنظیم نے حکومت کے مقابلے میں سستے حج پیکج کا اعلان کردیا ۔ٹور آپریٹرز نے چارلاکھ 36 ہزارکی بجائے پونے چار لاکھ میں حج کرانے کی پیشکش کردی۔ رواں سال پاکستان سے ایک لاکھ 84 ہزار210 عازمین فریضہ حج کی ادائیگی کے لئے سعودی عرب جائیں گے۔


فریضہ حج کی خواہش رکھنے والوں کیلئے خوشخبری ہے کہ پرائیویٹ کوٹے پر جانے والوں کو سستا حج پیکج ملے گا ۔ آل پاکستان حج فورم نے حکومت کے مقابلے میں تقریباً 61 ہزار روپے کم اخراجات کی پیشکش کردی ہے۔

صدر حج فورم ایسوسی ایشن عادل بٹ نے کہا کہ حکومت نے چار لاکھ 36 ہزار نو سو روپے کا اعلان کیا، ہم تین لاکھ 75ہزار روپے میں حج کروائیں گے۔ایسوسی ایشن کا دعویٰ ہے کہ سرکاری حج پروگرام میں زیادہ تر رقم کرپشن کی نذر ہوجاتی ہے۔

اس سے قبل پشاور کے پرائیویٹ ٹور آپریٹر سستا حج کروانے کیلئے میدان میں آگئے، پرائیویٹ حج آپریٹر شاہ جہاں خلیل نے آفر دی کہ 3 لاکھ 70 ہزار میں حج کرواسکتے ہیں حتیٰ کہ اس سے بھی سستا حج کرواسکتے ہیں، اس میں بھی ہماری بچت ہوگی۔انہوں نے الزام لگایا کہ حکومت من پسند افراد کو کوٹہ دیتی ہے، حکومت سے رابطہ کررہے ہیں، ہمیں کوٹہ دیا جائے۔

دوسری جانب آل پاکستان حج آپریٹر ایسوسی ایشن کے سربراہ ندیم شریف نے سماء سے گفتگو میں عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ سستے کے چکر میں دھوکا نہ کھائیں، ایسی باتیں وہ کرتے ہیں جنہیں حج کوٹہ نہیں ملتا، رجسٹرڈ پرائیویٹ ٹوور آپریٹرز اتنا سستا حج نہیں کروارہے۔

ندیم شریف نے مزید کہا کہ رواں سال کم سے کم پرائیویٹ حج پونے 6 لاکھ روپے کا ہوگا جبکہ حج پر زیادہ سے زیادہ لاگت 10 لاکھ روپے آئے گی۔

ڈالر کی قیمت میں اضافے اور پیٹرولیم مصنوعات مہنگی ہونے کے باعث پاکستان میں حج کے اخراجات میں اضافہ ہوا، جس سے ہر سطح پر عازمین متاثر ہوں گے۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎