ارشاد رانجھانی کی ہلاکت، یوسی چیئرمین رحیم شاہ کو گرفتار کرلیا گیا

پاکستان مسلم لیگ ن سے تعلق رکھنے والے یوسی چیئرمین رحیم شاہ کو سندھی قوم پرست پارٹی کے مقامی رہنما ارشاد رانجھانی کی ہلاکت کے معاملے پر گرفتار کرلیا گیا ہے۔


پولیس حکام کے مطابق یوسی چیئرمین رحیم شاہ کی گرفتاری ایڈیشنل آئی جی کراچی ڈاکٹر امیر شیخ کی ہدایت پر ہوئی۔

ڈی آئی جی ایسٹ اور ایس ایس پی پر مشتمل ٹیم تحقیقات کر رہی ہے، مقدمے میں ملزم کےخلاف دفعہ بھی عائد کی جائے گی۔

رحیم شاہ پر فائرنگ سے زخمی ارشاد کو فوری طور پر اسپتال نہ پہنچانے کا الزام ہے۔

ارشاد رنجھانی کی ہلاکت، وزیراعلیٰ سندھ کا آئی جی کو تحقیقات کا حکم

کراچی کے علاقے بھینس کالونی میں پانچ روز قبل یوسی چیئرمین رحیم شاہ نے ارشاد رنجھانی کو ڈاکو سمجھ کر گولی مار کر عوام کے سامنے شدید زخمی چھوڑ دیا تھا تاہم زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے وہ دم توڑ گیا۔

رحیم شاہ کا دعویٰ تھا کہ انھیں لوٹنے کی کوشش کی گئی جس کی وجہ سے اپنے دفاع میں فائرنگ کی۔ یوسی چیئرمین کا کہنا تھا کہ انھوں نے ون فائیو پر اطلاع کردی تھی لیکن ٹریفک کی وجہ سے پولیس تاخیر سے پہنچی۔

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے سندھی قوم پرست پارٹی کے مقامی رہنما ارشاد رنجھانی کی ہلاکت کا نوٹس لیتے ہوئے آئی جی سید کلیم امام کو مکمل تحقیقات کرنے کا حکم دے دیا تھا۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎