مرغی چوری کے الزام میں ایک سال سے قید شخص کی درخواست ضمانت پر کل سماعت ہوگی

مرغی چوری کے الزام میں ایک سال سے قید شخص کی درخواست ضمانت کی سماعت کل سپریم کورٹ میں ہوگی۔ اس سے قبل ضلعی عدالت اور ہائیکورٹ ان کی درخواست مسترد کرچکی ہیں۔


جسٹس مشیر عالم کی سربراہی میں سپریم کورٹ کا 2 رکنی بینچ کل یعنی 12 فروری کو ملزم محمد زاہد کی درخواست ضمانت پر سماعت کرے گا۔ بینچ میں جسٹس قاضی فائز عیسیٰ بھی شامل ہیں۔

محمد زاہد پر ان کے مالک سجاد نے الزام عائد کیا تھا کہ اس نے گھر سے 15 مرغیاں چوری کی ہیں جس پر پولیس نے غیر معمولی پھرتی دکھاتے ہوئے ایف آئی درج ہونے سے پہلے ہی محمد زاہد کو گرفتار کرلیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں: اصغرخان کیس، سپریم کورٹ کا ملوث فوجی افسران کیخلاف فوری کارروائی کا حکم

اس کے بعد پولیس نے محمد زاہد کے خلاف تعزیرات پاکستان کی دفعات 487 اور 380 کے تحت مقدمہ درج کیا۔ ان دفعات کے تحت درج مقدمات قابل ضمانت ہیں۔ اس بنیاد پر محمد زاہد نے ضمانت پر رہائی کے لیے درخواست جمع کروائی تھی جسے مجسٹریٹ، اس کے بعد ضلعی عدالت نے مسترد کردیا تھا۔

محمد زاہد نے ماتحت عدالتوں کے بعد اسلام آباد ہائی کورٹ میں درخواست دائر کردی مگر یہاں بھی اس کو ضمانت نہ مل سکی جس پر محمد زاہد نے آخری امید کے طور پر اپنے وکیل کے ذریعے سپریم کورٹ میں ضمانت کی درخواست دائر کی۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎