عالمگیرخان نے گٹر کا پانی سی ایم ہاؤس کے گیٹ پر پھینک دیا

کراچی کے شہریوں کو مسلسل کالے پانی کی سزا مل رہی ہے، کورنگی ہو یا لیاری ، کوئی علاقہ سیوریج کے پانی سے محفوظ نہیں، سماء نے مہم چلائی تو پی ٹی آئی ایم این اے عالمگیر خان کو بھی اپنے حلقے کا خیال آہی گیا، این اے دو سو تینتالیس سے سیورج کا پانی بھرا اور سی ایم ہاؤس کے دروازے پر جاکر پھینک دیا ۔


فکس اٹ کے بانی اور این اے دو سو تینالیس سے منتخب ہونے والے ایم این اے عالمگیر خان نے وزیرِ اعلیٰ ہاؤس کے گیٹ پر سیورج کا پانی پھینک دیا، عالمگیر خان اور فکس اٹ کے ارکان این اے دو سو تینالیس سے ہی سیورج کا پانی بھر بھر کر لائے تھے ۔

عالمگیر خان کہتے ہیں کہ میں ایم این اے نہ ہوتا تو یہاں تک نہیں پہنچ پاتا، وزیرِ اعلیٰ سندھ اور وزیرِ بلدیات شہر کی تباہی کے ذمہ دار ہیں، شہر میں گندا پانی سڑکوں پر کھڑا ہے اداروں کو شکایات دے دے کر تھک گیا ہوں۔

فکس اٹ کے بانی این اے دو ستینالیس کی نشت پر بیٹھنے کے بعد جیسے دعوے اور وعدے بھول ہی بیٹھے تھے، حلقے کے مسائل سے بھی لا علم رہے، سماء نے ان کے علاقوں کی ابتر صورتحال کی نشاندہی بھی کی جس کے بعد عالمگیر خان کو ہوش آیا ہے۔

دوسری جانب وزیربلدیات سندھ سعید غنی نے سڑک پر کچرا پھینکنے کو جرم قرار دے دیا، سندھ اسمبلی کے باہر میڈیا سے گفتگو میں انہوں نے کہا کہ اگر ایسا ہوا تو ہم بھی اپنے کارکنوں سے کہیں گے کہ وزیراعظم ہاؤس اور بنی گالہ پر کچرا پھینکیں۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎