پاکستان کے ساتھ کرکٹ کھیلنے کوتیارہیں لیکن۔۔ بھارت نے پاکستان کے ساتھ سیریز کھیلنے کی بڑی شرط رکھ دی

اگر دشمنی ختم اورسیاسی تعلقات میں بہتری آئے تو ہمیں پاکستان کے ساتھ کھیلنے میں کوئی مسئلہ نہیں ہے


بھارت نے پاکستان سے کرکٹ تعلقات کی بحالی کو ”دشمنی“ کے خاتمے سے مشروط کردیا ہے 

انھوں نے کہا کہ موجودہ چیئرمین پی سی بی احسان مانی گزشتہ کرکٹ بورڈ سربراہان شہریار خان اور نجم سیٹھی سے مختلف مگر وہ بھی حالات کے ہاتھوں مجبور ہیں، ہمارے کرکٹ تعلقات کا انحصار سیاسی کشیدگی اور دشمنی کے خاتمے پر ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی ) کے منیجنگ ڈائریکٹر(ایم ڈی )وسیم خان نے اتوار کو پریس کانفرنس میں کہا تھا کہ ہمیں خود کو اس مقام پر پہنچانا چاہیے جہاں بھارت خود کھیلنے کی درخواست کرے۔ اس پر بی سی سی آئی کے ایک آفیشل نے ایک بھارتی اخبار سے گفتگو میں کہاکہ اگر دشمنی ختم اورسیاسی تعلقات میں بہتری آئے تو ہمیں پاکستان کے ساتھ کھیلنے میں کوئی مسئلہ نہیں ہے،ایک بار اگر حالات معمول پر آجائیں تو کسی کو بھی کوئی مسئلہ نہیں ہوگا۔

ادھر ایک اور بھارتی آفیشل نے وسیم خان کے بیان کا مذاق اڑاتے ہوئے کہا کہ انھیں باہمی کرکٹ پر بات کرنے سے قبل پی سی بی کی پوزیشن کے بارے میں سوچنے کی ضرورت ہے،اس بات کو بھی سمجھنا ہوگا کہ انھیں پہلے خود کو بہتر بنانے کی ضرورت ہے۔یاد رہے کہ بھارتی کرکٹ بورڈ بارہا یہ پوزیشن لے چکا ہے کہ پاکستان کے ساتھ کرکٹ تعلقات کی بحالی کے لیے اسے حکومتی اجازت درکار ہے ۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎