غیرقانونی الاٹمنٹ کیس، کامران مائیکل جوڈیشل ریمانڈ پر جیل منتقل

احتساب عدالت کے منتظم جج نے پلاٹس کی غیر قانونی الاٹمنٹ کے الزام میں سابق وفاقی وزیر کامران مائیکل کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا۔


نیب نے کراچی پورٹ ٹرسٹ (کے پی ٹی) کوآپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی کے پلاٹس کی غیر قانونی الاٹمنٹ کے الزام میں کامران مائیکل کے 14 روزہ جسمانی ریمانڈ کی درخواست کی تھی۔

سابق وفاقی وزیر کامران مائیکل گرفتار

عدالت نے ریمانڈ دینے سے انکار کرتے ہوئے حکم دیا کہ جس عدالت میں ریفرنس زیرِ سماعت ہے وہیں ملزم کو پیش کیا جائے۔

پیشی کے موقع پر سابق وفاقی وزیر کامران مائیکل کا کہنا تھا کہ مجھے نواز شریف اور شہباز شریف کا ساتھ دینے کی سزا دی جا رہی ہے، ہم ڈٹے ہوئے ہیں اور ڈٹے رہیں گے۔

کامران مائیکل کی لاہور سے کراچی منتقلی اور5روزہ راہداری ریمانڈ منظور

کامران مائیکل نے کہا کہ مجھ پر کیس نہیں بنتا، عدالت کی جانب سے نیب کو ریمانڈ نہیں ملا بلکہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیجا ہے۔

سابق وفاقی وزیر کامران مائیکل کو گرفتاری کے بعد نیب افسران احتساب منتظم عدالت لائے تو ان پر پھول نچھاور کیے گئے۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎