پنجاب فوڈ اتھارٹی کے لاہور میں خالص دودھ کی فراہمی کے لیے اقدامات

پنجاب فوڈ اتھارٹی نے شہریوں کو خالص دودھ کی فراہمی یقینی بنانے کا بیڑا اٹھا لیا ہے۔ اس ہی مہم کے تحت آئے روز ناقص دودھ کو تحویل میں لے کر ضائع کردینا معمول ہے ۔


لاہور میں دودھ لانے والے ٹرکوں کی چیکنگ پنجاب فوڈ اتھارٹی کی ٹیموں کا معمول بن چکا ہے۔ جدید لیکٹو اسکین مشینوں سے کھلے دودھ کو پرکھا جاتا ہے۔ سال 2018 اور 2019 میں فوڈ اتھارٹی نے چھاپے مار کر 25 ہزار سے زائد گاڑیوں کی چیکنگ کی اور 40 لاکھ میں سے 3 لاکھ لیٹر سے زائد دودھ ناقص پایا گیا جس کو موقع پر ضائع کردیا گیا۔

بعض علاقوں میں چیکنگ کے دوران دودھ میں کیمیکل، پاؤڈر، یوریا کھاد اور بناسپتی گھی کی ملاوٹ پائی گئی ۔ شہریوں کو خالص دودھ کی فراہمی کےلیے حکومت کی جانب سے بہت جلد ڈبے والے دودھ کا قانون نافذ کرنے کے اقدامات بھی کیے جا رہے ہیں ۔

دوسری جانب گوالے نے روزانہ ہزاروں لیٹر دودھ تلف کیے جانے پر پنجاب فوڈ اتھارٹی سے ناراضگی کا اظہار کیا ہے۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎

مقبول ٹیگ‎‎‎