عدالت نے جعلی اکاؤنٹس کیس کراچی سے راولپنڈی منتقل کر دیا

بینکنگ کورٹ نے نیب کی درخواست منظور کرتے ہوئے آصف زرداری اور فریال تالپور کےخلاف جعلی اکاؤنٹس کیس کراچی سے راولپنڈی منتقل کر دیا۔


بینکنگ کورٹ نے 11 مارچ کو ہونے والی سماعت میں نیب کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کیا تھا جو آج سنایا گیا، مقدمہ اب نیب کورٹ راولپنڈی میں سنا جائے گا۔

گزشتہ سماعت میں آصف زرداری سمیت دیگر ملزمان کے وکلاء نےدلائل مکمل کر لیے تھے۔ فاروق ایچ نائیک نے نیب کی مقدمہ منتقلی کی درخواست پر اعتراض دائر کرتے ہوئے کہا تھا کہ سپریم کورٹ نے اپنے حکم میں مقدمہ منتقل کرنے کی ہدایت نہیں کی بلکہ نیب کو صرف تحقیقات کا حکم دیا ہے۔

عدالتی فیصلے پر پیپلز پارٹی رہنما اور وزیر بلدیات سعید غنی کا کہنا تھا کہ یہ مقدمات سیاسی انتقام کےلیے بنائے گئے اور ہم نے ماضی میں بھی قیادت پر لگنے والے جھوٹے الزامات کا عدالتوں میں سامنا کیا۔

سعید غنی نے کہا کہ پیپلزپارٹی کے ساتھ ہمیشہ یہ ہوتا رہا ہے، پہلے ذوالفقار علی بھٹو، پھر بینظیر بھٹو اور اب آصف زرداری کے ساتھ ہو رہا ہے۔

جعلی اکاؤنٹس کیس میں سابق صدر آصف علی زرداری اور انکی ہمشیرہ فریال تالپور سمیت دیگر نے عبوری ضامنت لے رکھی تھی، تاہم کیس راولپنڈی منتقل ہونے پر عبوری ضمانت خود بخود منسوخ ہوجائے گی۔ پیپلز پارٹی کی قانونی ٹیم نے سندھ ہائیکورٹ سے حفاظتی ضمانت کی تیاریاں کرلی ہیں۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎

مقبول ٹیگ‎‎‎