پنجاب پولیس نے اشتہاری ملزمہ کو دھرلیا

گجرات پولیس نے اشتہاری ملزمہ کو وارداتوں کی سلور جوبلی سے پہلے ہی گرفتار کرلیا۔ نعیمہ بی بی پولیس کو ڈکیتی کی چوبیس وارداتوں میں مطلوب تھی۔


پنجاب میں اشتہاری ڈاکوقرار دی جانے والی نعیمہ نامی ملزمہ چار سال بعد گجرات پولیس کی گرفت میں آگئی۔ ملزمہ کے سر کی قیمت 4 لاکھ روپے مقرر کی گئی تھی۔

پولیس کے مطابق یہ خاتون ڈ کیت انتہائی شاطر اور چالاک ہے جو پہلے ملازمہ بن کر گھروں میں داخل ہوتی ہے اور پھر موقع پاتے ہی ساتھیوں سمیت مال لوٹ کر فرار ہوجاتی ہے۔

ایس ایچ او صفدرعطاء کے مطابق ملزمہ 7 رکنی گینگ کی سرغنہ ہے جسے لاہور سے گرفتارکیا گیا ۔

طریقہ واردارت سے متعلق ایس ایچ او نے بتایا کہ ملزمہ متعلقہ گھروں کے معمولات سے متعلق تمام معلومات اکٹھی کرتی ہے کہ کب لوگ باہر جاتے ہیں ، پھر سات آٹھ ڈاکو بڑے ہتھیار لے کر آتے اور لوٹ کر فرارہوجاتے تھے۔

سیشن کورٹ نے ملزمہ نعیمہ کو ایک روزہ ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا جبکہ ملزمہ کے دیگر 6 ساتھیوں کی گرفتاری کے لیے کارروائیاں جاری ہیں۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎

مقبول ٹیگ‎‎‎