ارکانِ پنجاب اسمبلی کی تنخواہوں میں اضافہ، بل میں معمولی ترمیم

اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الہیٰ نے ارکان اور وزیراعلیٰ کی تنخواہوں میں اضافے سے متعلق بل میں معمولی ترمیم کر دی۔


پنجاب اسمبلی کے اسپیکر نے صوابدیدی اختیار استعمال کرتے ہوئے بل میں ترمیم کرکے منظوری کےلیے گورنر پنجاب چوہدری سرور کو بھجوا دیا۔

وزیراعظم کی ناراضگی کے بعد پنجاب اسمبلی کے ارکان کی تنخواہوں کے بل سے وزیراعلیٰ پنجاب کی مراعات کو ختم جبکہ اسپیکر کی تنخواہ بھی کم کردی گئی ہے۔

پنجاب اسمبلی ارکان کی تنخواہیں بڑھانے پر وزیراعظم کا اظہارِ مایوسی

ترمیمی بل سے وزیراعلیٰ کےلیے تاحیات رہائش، گاڑی اور اسٹاف کی مراعات کو نکال دیا گیا ہے۔

اسپیکر کی تنخواہ میں بھی 25 ہزار روپے کی کمی کی گئی ہے جبکہ ارکان اسمبلی اور وزراء کی تنخواہوں میں کوئی کمی نہیں کی گئی۔

گزشتہ روز وزیراعظم عمران خان نے اپنی ایک ٹویٹ میں اراکین اسمبلی، وزراء اور خصوصاً وزیراعلیٰ کی تنخواہوں اور مراعات میں اضافے کا فیصلہ انتہائی مایوس کن قرار دیا تھا۔

ملک میں سب سے زیادہ تنخواہیں کس صوبائی اسمبلی کے ارکان کی ہیں؟

بدھ 13 مارچ کو پنجاب اسمبلی کے اراکین نے تنخواہیں بڑھانے کا بل منظور کیا تھا جس کے مطابق ہر رکن اسمبلی کم سے کم 2 لاکھ روپے ماہانہ تنخواہ وصول کرے گا جبکہ اسمبلی سیشن میں آنے اور دیگر مراعات اسکے علاوہ ہوں گی۔

واضح رہے کہ اراکین اسمبلی تقریباً ہر دور میں اپنی تنخواہوں میں اضافے کی قرار دادیں منظور کر چکے ہیں، آخری مرتبہ تنخواہ میں اضافہ ن لیگ کے دور میں 2016ء میں کیا گیا تھا۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎

مقبول ٹیگ‎‎‎