این آئی سی وی ڈی سکھر میں الیکٹروفزیالوجی اور دوسری کیتھ لیب کا افتتاح

این آئی سی وی ڈی سکھر میں الیکٹروفزیالوجی اور دوسری کیتھ لیب کا افتتاح—. فوٹو فائل


سکھر: قومی ادارہ برائے امراض قلب (این آئی سی وی ڈی) کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر ڈاکٹر ندیم قمر نے سکھر میں الیکٹروفزیالوجی اور دوسری کیتھ لیب کا افتتاح کردیا۔

این آئی سی وی ڈی سکھر کے ایک برس مکمل ہونے کی تقریب میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر ندیم قمر کا کہنا تھا الیکٹروفزیالوجی اور دوسری کیتھ لیب سے مریضوں کا بڑھتا ہوا رش کم ہوگا اور ان کو جدید سہولیات کے ساتھ بہترین علاج فراہم کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ اسپتال میں بچوں کے وارڈز نے کام شروع کردیا ہے اور جلد بچوں کے دل کی سرجریز بھی شروع کردیں گے۔

ڈاکٹر ندیم قمر کے مطابق اس سے شمالی سندھ سمیت جنوبی پنجاب اور پورے بلوچستان کے مریضوں کو سہولت ہوگی اور تمام مریضوں کو موثر علاج فراہم کیا جائے گا۔

انہوں نے بتایا کہ این آئی سی وی ڈی سکھر میں ایک سال کے دوران ہارٹ اٹیک کے 1250 مریض لائے گئے جن کی ایمرجنسی انجیوپلاسٹی کی گئی جب کہ 201 مریضوں کا کامیاب بائی پاس آپریشن کیا گیا ہے۔

ڈاکٹر ندیم قمر نے دعویٰ کیا کہ دل کے امراض کے علاج کے لیے یہ پاکستان کا بہترین اسپتال ہے جہاں نواز شریف سمیت امریکا اور لندن سے آنے والے مریضوں کو بھی علاج کی بہترین سہولیات فراہم ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ سندھ حکومت نے سپریم کورٹ میں اسپتال کو اپنے زیر انتظام رکھنے کے لیے ریویو پٹیشن دائر کردی ہے امید ہے کہ یہ اسپتال صوبائی انتظامیہ ہی کے پاس رہے گا لیکن اگر اسے وفاقی حکومت بھی چلائے گئی تو اسے خدمات کا یہی معیار اور سہولتوں کی مفت فراہمی جاری رکھنی ہوگی ورنہ یہ اس کے لیے سیاسی طور پر نقصان دہ ہوگا۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎

مقبول ٹیگ‎‎‎