مساجد کے حملہ آور سے یوٹیوب کا سب سے مشہور شخص پریشان

مساجد پر حملہ کرنے والے 4 میں سے ایک حملہ آور مساجد پر حملے کی آن لائن ویڈیو بھی چلائی تھی۔


برینٹن ٹیرنٹ کی جانب سے آن لائن ویڈیو جاری کرنے اور اس ویڈیو میں ان کی جانب سے کہی گئی باتوں سے جہاں دنیا کے دیگر افراد پریشان ہوئے وہیں ویڈیو اسٹریمنگ ویب سائٹ یوٹیوب کے سب سے مشہور اور سب سے زیادہ سبسکرائبر چینل ’پیو ڈی پائی‘ کے بانی بھی پریشان ہوگئے۔

حملہ آور کی ویڈیو وائرل ہونے کے بعد ’پیو ڈی پائی‘ چینل کے بانی فیلکس اروید الف کجیلبرگ نے ٹوئیٹ کی اور کرائسٹ چرچ مساجد واقعے میں جاں بحق افراد کے اہل خانہ سے افسوس کا اظہار کیا۔

پیو ڈی پائی کے بانی فیلکس اروید الف کجیلبرگ نے اپنی ٹوئیٹ میں حیرانگی کا اظہار کیا کہ مساجد پر دہشت گردانہ حملہ کرنے والے شخص نے ان کا نام کیوں لیا؟

پیوڈی پائی کے بانی کا کہنا تھا کہ وہ اس بات پر شدید حیران ہیں کہ حملہ آور نے ان کا نام لیا۔

انہوں نے مزید لکھا کہ ان کی ہمدریاں حملے میں متاثر ہونے والے افراد کے اہل خانہ کے ساتھ ہیں۔

پیوڈی پائی کے بانی کی ٹوئیٹ پر کئی افراد نے کمنٹس کیے اور لکھا کہ وہ جانتے ہیں کہ دہشت گردانہ حملے سے پیوڈی پائی کا کوئی تعلق نہیں۔

تاہم کچھ افراد نے کمنٹس میں لکھا کہ پیوڈی پائی تنگ نظر اور شدت پسند نظریات کو فروغ دیتے ہیں۔

خیال رہے کہ پیوڈی پائی کا چینل سویڈن کے 29 سالہ فیلکس اروید الف کجیلبرگ 2010 میں قائم کیا تھا۔

یہ چینل یوٹیوب کا سب سے بڑا سبسکرائبر چینل ہے اور اس کا مقابلہ بھارتی چینل ’ٹی سیریز‘ سے ہے جو یوٹیوب کا دوسرا بڑا سبسکرائبر چینل ہے۔

پیوڈی پائی کو فلیکس اروید الف تنہا چلاتے ہیں، تاہم کچھ افراد انہیں مختلف معاملات میں تعاون فراہم کرتے ہیں۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎

مقبول ٹیگ‎‎‎