’مسجدپر حملہ کرنے والا فائرنگ کے بعد بھی دیر تک موجود رہا‘


نیوزی لینڈ میں کرائسٹ چرچ کی النور مسجد میںفائرنگ سے زخمی ہونے والے ایک نمازی فرید احمدکا کہنا ہےکہ 49نمازیوں کو شہید کرنے والا آسٹریلوی دہشتگرد ہال اور متصل کمروں میں فائرنگ کے بعد بھی کافی دیر تک موجود رہا۔

فرید احمد نے کہا کہ دہشتگرد گولیاں چلانے کے بعد بھی بچ جانے والے نمازیوں کا جائزہ لیتا رہا۔

انہوں نے کہا کہ فائرنگ میں بچ جانے والے جس نمازی نے بھی اٹھ کر باہر جانے کی کوشش کی تو دہشتگرد نے اسے تاک تاک کر گولیاں ماریں۔

واقعے کے وقت مسجد میں موجود نمازی کا کہنا ہے کہ فرش پر گولیوں کے سیکڑوں خول موجود تھے۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎

مقبول ٹیگ‎‎‎