شہباز شریف کی این آر او کے لیے بڑی پیشکش

 

اپوزیشن لیڈر شہباز شریف بیرون ملک جانے کے لیے پی اے سی کی چئیرمین شپ چھوڑنے کو تیار، حکومت بھی شہباز شریف کی پیشکش پر سنجیدگی سے غور کرنے لگی۔ قومی اخبار کی رپورٹ

 

اس حوالے سے ایک وفاقی وزیر نے انکشاف کیا ہے کہ انہوں نے اپنے کانوں سے سنا ہے اور آنکھوں سے دیکھا ہے کہشہباز شریف نے این آر او مانگا ہے اور حکومت ان کے این آر او پر سنجیدگی سے غور کر رہی ہے۔جب کہ دوسری طرف بتایا جا رہا ہے کہ مسلم لیگ (ن )کے صدر شہباز شریف​​​​​​​  کا کمر دور بہتر نہ ہو سکا ۔ذرائع کے مطابق اسلام آباد کے پمزہسپتا ل کی فزیو تھراپسٹ نے شہباز شریف​​​​​​​ کا طبی معائنہ کیا ۔ دو گھنٹے تک شہباز شریف​​​​​​​ کی فزیو تھراپی کی گئی ۔ڈاکٹرز کا شہباز شریف​​​​​​​ کو مکمل آرام کا مشورہشہباز شریف کو ورزش اور بروقت ادویات کھانے کی ہدایت کی گئی ۔سرجن اور فزیو تھراپسٹ پہلے بھی جسم میں درد کے باعث نقل و حرکت محدود کرنے کی ہدایت دی چکے ہیں۔

 

لاہور قومی اخبار کی ایک رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ اپوزیشن لیڈر شہباز شریف​​​​​​​ نے بیرون ملک علاج کے سلسلے میں جانے کے لیے این آر او کی کوششیں تیز کر دی ہیں شہباز شریف​​​​​​​ پی اے سی کی چئیرمین شپ بھی رضاکارانہ طور چھوڑنے کو تیار ہو گئے ہیں۔ابتدائی طور پر دو ماہ کے لیے بیرون ملک جانے کی درخواست کی جا سکتی ہے۔

 

اخباری رپورٹ میں مزید بتایا گیا ہے کہ اپوزیشن لیڈر شہباز شریف​​​​​​​ نے میڈیکل رپورٹس کی بنیاد پر بیرون ملک علاج کے لیے حکومت سے باضابطہ طور این آر او مانگا ہے اور مسلم لیگ ن کے ذرائع کا کہنا ہے کہ شہباز شریف نے دو ماہ علاج کے بعد وطن واپس آ جائیں گے اور پھر ملک سے باہر جائیں گے تو لمبی مدت کے لیے قیام و طعام ہو سکتا ہے۔ریکوری سے متعلق سوال کے جواب میں بتایا گیا ہے کہ شہباز شریف​​​​​​​ کے ذمہ تمام واجب ادا ہو گی اور وہ واپس کر دی جائیں گی لیکن سلمان شہباز، حمزہ شہباز اور داماد علی عمران سے متعلق شہباز شریف​​​​​​​ پریشان ہیں اور اور اسی پریشانی کی وجہ سے ان کی بیماری بڑھتی جا رہی ہے۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎