ایمانداری کی اعلیٰ مثال۔۔۔ پنجاب پولیس میں ایسے اہلکار بھی ہیں !!

لاہور: پنجاب پولیس کے کانسٹیبل نے ایمانداری کی مثال قائم کر دی ایک لاکھ روپے ملنے پر اپنے اصل مالک کے حوالے کر دئیے۔تفصیلات کے مطابق جب بھی پنجاب پولیس کا ذکر آتا ہے تو ہمارے ذہن میں پنجاب پولیس کا ایک انتہائی منفی سا خاکہ ابھرتا ہے۔جس میں رشوت ستانی ، اختیارات سے تجاوز اور شہریوں سے بدتمیزی نمایاں نظر آتی ہے۔

 

اس وجہ سے پنجاب پولیس کے حوالے سے عوام میں انتہائی منفی تاثرات پائے جاتے ہیں اور عوام پولیس کو اپنا محافظ سمجھنے کی بجائے اس سے کترانے لگتی ہے۔تاہم ابھی بھی محکمہ پولیس میں کچھ ایسے پولیس اہلکار اور افسران ہیں جن کی ایماندار ی اس بات کا منہ بولتا ثبوت ہے کہ محکمہ پولیس میں ہر اہلکار رشوت لینے والا نہیں ہوتا۔

 

حال ہی میں ایک پولیس اہلکار کی ایمانداری کا ایسا واقعی پیش آیا ہے جس نے سب کو اپنی تعریف کرنے پر مجبور کر دیا ہے۔

 

میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ امتیاز نامی پولیس کانسٹیبل نے محکمہ پولیس کا نام فخر سے بلند کر دیا جسے سڑک سے ایک لاکھ روپے کی رقم ملی تو اس نے ایمانداری کا ثبوت دیتے ہوئے ڈی پی او راجن پور  کو آگاہ کیا جس کے بعد پولیس نے سوشل میڈیا کا سہارا لیتے ہوئے مالک کو ڈھونڈ نکالا اور ایک لاکھ روپے کی رقم مالک کے حوالے کر دی۔

 

امتیاز کا کہنا ہے کہ مجھے ایک لاکھ روپے ملے جس کے بعد میں نے ڈی پی او کا آگاہ کیا کہ مجھے ایک لاکھ روپے ملے ہیں لیکن میں اسے اصل مالک تک پہنچانا چاہتا ہوں جس پر ڈی پی او نے کہا کہ آپ سوشل میڈیا پر ایک ایڈ بنا کر دے دیں اور جس کے بھی پیسے ہوں گے وہ ہم سے رابطہ کرے گا۔گم ہونے والی رقم واپس ملنے پر مالک خالد خوشی سے نہال ہو گیا۔خالد کے مطابق پیسے بینک جاتے ہوئے گر گئے تھے جو آج اسے واپس مل گئے ہیں۔شہری نےپولیس کانسٹیبل، ڈی پی او اور محکمہ پنجاب کا شکریہ ادا کیا۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎