علی رضا عابدی قتل کیس میں اہم پیش رفت

قاتلانہ حملے میں جاں بحق ہونے والے سابق رکن قومی اسمبلی علی رضا عابدی کے گارڈ قدیر کا بیان سامنے آگیا ۔


ویڈیو بیان میں قدیر نے کہا کہ وہ ایک مہینہ اور 25 دن سے بنگلے پر ملازمت کررہا ہے ، ڈیوٹی شام 7 سے صبح 7 بجے تک ہوتی تھی ۔

گارڈ نے مزید کہا کہ صاحب کی گاڑی دروازے پر رکی تو میں اسے کھولنے کےلئے اٹھا،بائیں ہاتھ میں گن تھی دائیں سے دروازہ کھولا ۔

قدیر نے یہ بھی کہاکہ ابھی دروازے کا ایک حصہ ہی کھولا تھا کہ فائرنگ ہوئی، دروازہ چھوڑ کر گن لوڈ کرنے کی کوشش کی۔

علی رضا عابدی کے گارڈ کے مطابق ایک بار گن لوڈ نہ ہونے کی پر دوبارہ کوشش کی لیکن اس بار بھی ناکام رہا۔

باہر نکلا تو کوئی بھی نظر نہیں آیا،صاحب کو دیکھا تو ان کی گردن سے خون نکل رہا تھا ۔

گزشتہ روز 46 سالہ علی رضا عابدی کو ان کے گھر کے باہر 2 نامعلوم موٹر سائیکل سواروں نے انتہائی قریب سے نشانہ بنایا تھا۔

عمران خان کے مقابل این اے 243کی نشست پر الیکشن لڑنے والے علی رضا عابدی ایم کیو ایم کے دھڑوں کو متحد کرنے کی کوشش کررہے تھے ۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎