وزیراعظم عمران خان نے ’اپنے آپ پر‘بھی تنقید کر ڈالی

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ جو پاکستان پر حکمرانی کرتے تھے ،ان کے یہاں سٹیک نہیں تھے ،عوام کوسمجھ آنی چاہیے ان کے ساتھ کیا ہوا؟،حکمرانی پاکستان میں ہو رہی ہے اور بچے باہر پڑھ رہے ہیں ۔پنجاب کی 100روزہ کار کردگی سے متعلق تقریب میں خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بہت سے لوگ پوچھتے ہیں کہ عثمان بزدار کو اتنا اہم عہدہ کیوں دیا ؟،میں نے نہیں سنا کہ عثمان بزدار یہاں سے پیسہ منی لانڈرنگ کر کے باہر لے گئے ہوں ،کسی نے نہیں کہا کہ عثمان بز دار نے کمیشن کھایا ،بیرون ملک جائیداد بنائی ۔ان کاکہنا تھا کہ بد قسمتی سے ماضی کے حکمرانوں نے حکومت پاکستان میں کی ،کاروبار باہر کیا ،جو پاکستان پر حکمرانی کرتے تھے ان کے ان کے سٹیک یہاں نہیں تھے ،حکمرانی پاکستان میں ہو رہی ہے اور جائیدادیں باہر خریدی جا رہی ہیں ،حکمرانی پاکستان میں ہو رہی ہے اور بچے باہر پڑھ رہے ہیں ۔وزیراعظم نے مزید کہا کہ ایسی صورتحال میں قرضے چڑھتے گئے ،کیا انہیں فکر نہیں تھی ؟،بیرونی سرمایہ کار اس صورتحال میں کس طرح پاکستان میں سرمایہ کاری کریں گے ۔

واضح رہے کہ وزیراعظم عمران خان کے بیٹے قاسم اور سلمان خان لندن میں اپنی والدہ جمائما خان کے پاس رہتے ہیں اور وہ بھی لندن میں ہی زیر تعلیم ہیں ۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎