کیا نیلی چائے موٹاپے کی روک تھام کے لیے مفید ہے؟

آپ نے سبز، سیاہ یا سنہری چائے تو پی ہوگی مگر کیا نیلی چائے سے لطف اندوز ہوئے؟


اگر نہیں تو بلیو بٹرفلائی پی فلاور ٹی کو ضرور آزما کر دیکھیں جسے گرم یا ٹھنڈی شکل میں جس طرح بھی پیا جائے، لوگوں کو پسند آتی ہے۔

یہ کیفین فری ہربل چائے ہے جو کہ Clitoria ternatea نامی پودے کے تازہ یا خشک پتوں سے تیار کی جاتی ہے۔

اسے سب سے پہلے جنوب مشرقی ایشیائی ممالک میں متعارف کرایا گیا تھا مگر اب دنیا بھر میں اسے پیا جاتا ہے اور ہر ملک میں ہی اسے بنانے کے لیے درکار چیزیں مل جاتی ہیں۔

ایک حالیہ تحقیق میں دریافت کیا گیا تھا کہ یہ چائے موٹاپے سے نجات کے ساتھ ساتھ جگر پر چربی چڑھنے کے امراض سے لڑنے میں بھی مدد دیتی ہے۔

چوتھائی کپ خشک بلیو بٹرفلائی پی فلاور ٹی فلاورز

ایک سے دو کپ گرم پانی

ایک چائے کا چمچ لیموں

ایک چائے کا چمچ شہد

برف کے ٹکڑے (اگر ٹھنڈی پینا چاہتے ہیں)

اسے بنانے کے لیے ایک سے چار کپ پانی کو تیز آنچ پر گرم کریں، جب وہ ابل جائے تو پھر اس میں خشک بلیو بٹرفلائیفلاورز کا اضافہ کردیں ، پھر برتن کو ڈھک دیں اور 20 سے 30 منٹ تک کے لیے چھوڑ دیں۔

اس کے بعد اگر گرم چائے پینا چاہیں تو اس میں لیموں کے عرق اور شہد کو شامل کرکے پی لیں، اگر ٹھنڈی شکل میں پینا ہے تو مشروب کو ٹھنڈا ہونے دیں اور پھر کپوں میں ڈال کر برف کے ٹکڑے شامل کردیں۔

اس کے فوائد درج ذیل ہیں۔

اس چائے کا استعمال معمول بنانا جسم میں کیلوریز جلنے کے عمل کو تیز کرتا ہے جبکہ میٹابولزم کو تیز کرتا ہے، ماہرین کے مطابق اس چائے کو دن میں 2 بار پینے کی عادت زیادہ کیلوریز جلاتی ہے، اس سے جگر پر چربی کم ہوتی ہے جو کہ عام طور پر جسمانی وزن میں اضافے کا باعث بنتی ہے خصوصاً توند۔ اس کو پینے سے توند سے نجات آسان ہوسکتی ہے۔

یہ چائے اینٹی آکسائیڈنٹس سے بھرپور اور ورم کش ہوتی ہے جس سے جسم سے زہریلے مواد کے اخراج میں مدد ملتی ہے جو کہ غیرضروری چربی کو بھی گھلاتا ہے۔

جو لوگ اکثر چڑچڑے رہتے ہیں ان کے لیے یہ مشروب بہترین ہے کیونکہ یہ ذہنی تناﺅ کم کرکے مزاج کو خوشگوار بناتا ہے۔

ماہرین کے مطابق یہ نیلی چائے عمر بڑھنے سے جلد پر مرتب ہونے والے اثرات کے خلاف مزاحمت کرتی ہے جبکہ اس ہارمون کو متحرک کرتی ہے جو جلد کو جواب رکھتا ہے۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎