حکومت سے ناراض کئی رہنماؤں نے پاکستان تحریک انصاف سے اُڑان بھرنے کی تیاری کرلی

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف جہاں ملکی مسائل کے حل اور معیشت کی بہتری کے لیے کام کر رہی ہے وہیں حکومتی جماعت کو اتحادی جماعتوں کی جانب سے دباؤ کا سامنا بھی ہے۔ حال ہی میں مسلم لیگ ق کی قیادت نے حکومت سے تحفظات کا اظہار کیا تھا ، یہ معاملہ ابھی سُلجھا نہیں کہ پیپلز پارٹی سے حکومتی جماعت میں شامل ہونے والے سیاسی رہنما بھی حکومت سے ناراض ہو گئے ہیں۔

 

میڈیا رپورٹ کے مطابق حکومتی کارکردگی اورپارٹی پالیسی سے ناراض کئی رہنماؤں نے پاکستان تحریک انصاف سے اُڑان بھرنے کی تیاری کرلی ہے۔ ذرائع کے مطابق پاکستان پیپلزپارٹی چھوڑکرپاکستان تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کرنے والے کئی رہنماؤں نے پارٹی میں واپسی کے لیے اہم شخصیات سے رابطے بھی شروع کردیئے ہیں ۔

 

ذرائع کے مطابق سابق صدراور پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین نے پیپلزپارٹی چھوڑکرتحریک انصاف میں جانے والے رہنماؤں اورکارکنوں کی واپسی کے لیے باقاعدہ ایک کمیٹی بھی قائم کردی ہے ۔

 

سابق صدرآصف علی زرداری نے پیپلزپارٹی کے صوبائی صدورکو یہ ٹاسک دیا ہے کہ وہ پاکستان تحریک انصاف اورموجودہ حکومت کی پالیسیوں سے نالاں سابق پی پی رہنماؤں کی واپسی کے لیے ان سے رابطے کریں اور اس حوالے سے ان سے بات چیت کا آغاز کریں۔ یاد رہے کہ عام انتخابات 2018ء سے قبل متعدد سیاسی شخصیات اورپیپلزپارٹی کے عہدیداروں نے پاکستان تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کی تھی، پاکستان تحریک انصاف میں شامل ہونے والوں میں اکثریت کا تعلق سندھ ، پنجاب اورخیبرپختونخوا سے تھا۔

 

معتمد ترین ذرائع نے کہا کہ پیپلزپارٹی سے پاکستان تحریک انصاف میں جانے والے بہت سے سیاسی رہنماؤں نے پاکستان تحریک انصاف کی حالیہ پالیسیوں پرتشویش کا اظہار کیا اور پیپلزپارٹی میں واپسی کے لیے کوششیں بھی شروع کر دی ہیں۔ پیپلزپارٹی کے شریک چیئرمین اورسابق صدرآصف زرداری نے صوبائی صدورکو یہ ٹاسک دیا ہے کہ وہ پاکستان تحریک انصافمیں شامل ہونے والے ایسے تمام رہنماؤں اورعہدیداروں کو جو  پاکستان تحریک انصاف سے واپس پیپلزپارٹی میں آنے کے خواہشمند ہیں ، سے رابطہ کرکے انہیں بلدیاتی انتخابات سے قبل پارٹی میں ایڈجسٹ کرنے کے لیے فوری اقدامات کریں۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎