ن لیگ کا نواز شریف کی سزا کیخلاف احتجاج کا اعلان

مسلم لیگ ن نے سابق وزیراعظم نوازشریف کی 7 سال قید کی سزا کے خلاف احتجاج کا اعلان کردیا ہے ۔


سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے عدالتی فیصلے پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ سزا دینا تھی ،سزا دیدی گئی ،نواز شریف کو دوسرے ریفرنس میں بھی بری کیا جانا چاہیے تھا۔

ان کا کہناتھاکہ پاکستان کی تاریخ کا پہلا فیصلہ ہے جو عدالت بند کرکے سنایا گیا فیصلے پر عوامی احتجاج اور پارلیمنٹ کے اندراورباہر احتجاج کیا جائےگا۔

شاہد خاقان عباسی نے مزید کہا کہ عدالتوں کااحترام کرتےہیں،لیکن ان فیصلوں کوعوام اورتاریخ قبول نہیں کرتی،دونوں کیسز میں کوئی ثبوت نہیں ہے ۔

انہوں نے کہا کہ نوازشریف کو ایک کیس میں بری اور دوسرے میں سزا دی گئی جب کہ دونوں کیسز میں کوئی ثبوت نہیں اور نا ہی کوئی گواہ ہے۔

سابق وزیراعظم نے یہ بھی کہاکہ اس فیصلے کے بارے میں بہت سارے شکوک و شبہات ہیں،اپیل ہمارا حق ہے،ہم ہمیشہ عدالتوںکا راستہ اپنایا ہے۔

ان کا کہناتھاکہ جس مقدمے میں سزا دی گئی ہے اس کے حقائق پورے پاکستان کے سامنے ہیں،گواہوں نے خود کہا کہ اس مل سے نوازشریف کا کوئی تعلق نہیں، دنیا ہنستی ہے کہ کس قسم کے فیصلے ہورہے ہیں۔

شاہد خاقان عباسی نے مزید کہا کہ عدالت میں تالے لگا کر، بندوقیں تان کر فیصلہ کیا گیا، عوامی احتجاج کریں گے، پارلیمنٹ کے اندر اور پارلیمنٹ کے باہر احتجاج کریں گے،پُر امن احتجاج کریں گے، ہمارے احتجاج میں تشدد نہیں ہوگا۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎