پیرس کی سڑکیں پھر میدان جنگ بن گئیں،12مظاہرین گرفتار

فرانسیس میں صدر ایمانوئل میکرون کے استعفے کا مطالبہ زور پکڑنے لگا، جس کے ساتھ ہی دارالحکومت پیرس میدان جنگ بن گیا۔ پیلی جیکٹ مظاہرین اور پولیس میں شدید جھڑپیں ہوئیں۔ آنسو گیس کی شیلنگ واٹر کینن کا آزادانہ استعمال کیا گیا۔ پولیس نے بارہ مظاہرین کو گرفتار کرلیا۔


غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کی جانب سے جاری پورٹس کے مطابق فرانس میں صدر ایمانوئل میکرون کے استعفے کا مطالبہ لیے پیلی جیکٹ مظاہرین نے دسویں ہفتے بھی احتجاج جاری رکھا ہوا ہے۔ پیرس دن بھر میدان جنگ کا منظر پیش کرتا رہا۔ گلی گلی ہونے والے مظاہرے کے دوران پولیس اور مظاہرین میں جھڑپیں ہوئیں، جس میں درجن سے زائد افرد گرفتار کرلیے گئے۔

دارالحکومت پیرس کے بعد دیگر شہروں میں بھی مظاہرین اور پولیس کے درمیان تصادم سامنے آیا۔ پیرس میں ہزاروں کی تعداد میں پیلی جیکٹ پہنے مظاہرین سڑکوں پر نکلے اور حکومت مخالف احتجاج ریکارڈ کرایا۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎