کیا شرجیل خان کی انٹرنیشنل کرکٹ میں واپسی ہو گی؟ فیصلہ ہو گیا

پابندی کا شکار قومی ٹیم کے اوپننگ بلے باز شرجیل خان نے اسپاٹ فکسنگ کیس میں اپنی سزا کو چیلنج نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور وہ انٹرنیشنل کرکٹ میں واپسی کے لیے پاکستان کرکٹ بورڈ(پی سی بی) کے بحالی پروگرام میں شرکت کریں گے۔


پاکستان سپر لیگ کے دوسرے ایڈیشن میں منظر عام پر آنے والے اسپاٹ فکسنگ اسکینڈل کے نتیجے میں پی سی بی نے شرجیل خان پر پانچ سال کی پابندی عائد کردی تھی۔

تاہم اگر شرجیل پی سی بی سے تعاون کرتے ہیں اور بحالی کے پروگرام کا حصہ بنتے ہیں تو ستمبر 2019 سے پاکستان کے لیے انٹرنیشنل کھیلنے کے اہل ہو سکتے ہیں۔

ذرائع کے مطابق شرجیل خان نے چند ہفتوں قبل لاہور میں پی سی بی چیئرمین احسان مانی سے ملاقات کی اور درخواست کی کہ ان کے مقدمے پر نظرثانی کی جائے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ شرجیل کا اپنی پابندی کو چیلنج کرنے کا کوئی ارادہ نہیں اور وہ پی سی بی کے بحالی پروگرام میں شرکت کے خواہاں ہیں جبکہ بائیں ہاتھ کے بلے باز نے پی سی بی کو اپنے مکمل تعاون کی یقین دہانی کرائی ہے۔

معتبر ذرائع نے مزید بتایا کہ محمد عامر کی طرح 30ماہ کی پابندی کو نظرانداز کیے جانے سے قبل شرجیل ڈومیسٹک کرکٹ میں جلد واپسی کے خواہاں ہیں۔

پی سی بی کے انسداد کرپشن کوڈ کے تحت پی سی بی چیئرمین کے پاس یہ اختیار ہے کہ وہ پابندی کا شکار کھلاڑی کو کسی بھی وقت ڈومیسٹک کرکٹ کھیلنے کی اجازت دے سکتا ہے۔

۔۔۔۔۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎