حکومت کے اپنے لوگ ہی حکومت کیلیے خطرہ بن گئے

اسلام آباد: (دنیا نیوز) مسلم لیگ نواز نے دعویٰ کیا ہے کہ حکومت ناکام ہو گئی کیونکہ حکومتی ترجمان فرخ سلیم نے خطرناک معاشی صورتحال کی نشاندہی کر کے خطرے کی گھنٹی بجا دی ہے۔ ہمیں تحریک چلانے کی ضرورت نہیں، حکومت اپنے وزن سے خود ہی ختم ہو جائے گی۔


اسلام آباد میں دیگر لیگی رہنماؤں کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ یہ دنیا کی سب سے زیادہ جھوٹ بولنے والی حکومت ہے، افراط زر میں اتنا اضافہ دس سالوں کے اندر نہیں ہوا، جھوٹوں کے ٹولے نے معیشت کا یہ حال کر دیا ہے، ایک وزیر کا بیان دوسرے سے نہیں ملتا، اس کے وزرا منہ بند رکھیں گے تو پاکستان کا بھلا ہی بھلا ہو گا۔

ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ جو وزیر جیب میں پستول ڈال کر چینی قونصلیٹ پہنچ سکتا ہے وہ کچھ بھی کر سکتا ہے، فیصل واوڈا کسی کے باپ کے نوکر نہیں عوام کے نوکر ہیں، ان کے سیکریٹری کو پبلک اکاؤنتس کمیٹی (پی اے سی) میں پیش ہونا پڑے گا۔

سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ اسحاق ڈار کو فرار کرانے میں میرے خلاف مقدمہ درج اور فریق فواد چودھری کو بنایا جائے، اگر فواد چودھری کا الزام غلط ثابت ہوا تو انھیں جیل میں ڈالا جائے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت فیصلہ کر لے کہ آئی ایم ایف میں جانا ہے یا نہیں؟ اگر آئی ایم ایف میں جانے کا فیصلہ ستمبر میں کر لیا جاتا تو یہ حالات نہ ہوتے۔

مہمند ڈیم کا ٹھیکہ ڈیسکون کمپنی کو دینے کے بارے میں بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ میں عبدالرزاق داؤد کو بیس سال سے جانتا ہوں، وہ میرے محترم ہیں، اپنی کمپنی بارے وضاحت کریں، دوسری کمپنی قواعد کے مطابق بڈ میں کامیاب نہیں ہو سکی، عبدالرزاق داؤد پر جب تک الزام ثابت نہ ہو انہیں عہدے پر رہنے کا حق حاصل ہے۔

لاہور اورنج لائن منصوبے پر بات کرتے ہوئے شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ اس پر امیر نہیں غریب آدمی سفر کریں گے، منصوبے کو اس لیے مکمل نہیں کیا جا رہا کہیں ن لیگ کی حکومت کو کریڈٹ نہ مل جائے۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎