فواد چوہدری نے پی آئی اے عملے کی سرزنش کیوں کی؟

پی آئی اے لاہور کے عملے کا اپنے سی ای او زاہد مظہر کو پروٹوکول دینے کے معاملے پر وفاقی وزیراطلاعات فواد چوہدری نے عملے کی سرزنش کردی۔


وفاقی وزیراطلاعات فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ جب صدر پاکستان عارف علوی تک ایئرپورٹس پر پروٹوکول نہیں لیتے تو یہ لوگ حکومتی پالیسیوں کی مخالفت کرنے والے کون ہوتے ہیں ۔

اس موقع پر فواد چوہدری کے ساتھ دو وفاقی وزرا شفقت محمود اور رزاق داؤد بھی تھے، تینوں وزرا آج صبح پی آئی اے کی پروز سے لاہور سے اسلام آباد جانے کیلئے ایئر پورٹ پہنچے تو پی آئی اے کا عملہ ہاتھوں میں پھول لئے ڈومیسٹک ڈیپارچر کے باہر کھڑا تھا جو اپنے سی ای او زاہد مظہر کو پروٹوکول دینے آیا تھا۔

فواد چوہدری کے پوچھنے پر بتایا گیا کہ پی آئی اے کےچیف ایگزیکٹو آفیسرزاہد مظر آرہےہیں جس پر فواد چوہدری نے کےعملے کی سرزنش کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے پروٹو کول پر پابندی عائد کررکھی ہے ، صدر،وزیراعظم سمیت کوئی پروٹوکول نہیں لیتا، آپ لوگ مسافروں کی دیکھ بھال کرنے کے بجائے پروٹوکول میں مصروف ہیں ۔

فواد چوہدری نے سی ای او زاہد مظہر کو پروٹوکول دینے پراسٹیشن منیجر سمیت پی آئی اے کے عملے سےتحریری وضاحت طلب کرلی ہے ۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎