سزا سننے کے بعد نواز شریف نے عدالت کے جج سے کیا اپیل کی؟ کمرہ عدالت سے بڑی خبرآگئی

سابق وزیراعظم نوازشریف کے خلاف العزیزیہ اسٹیل ملز اور فلیگ شپ ریفرنسز کا فیصلہ آنے کے بعد انہیں کمرہ عدالت سے گرفتار کر لیا گیا.


نواز شریف نے سزا سننے کے بعداڈیالہ جیل کے بجائے کوٹ لکپت جیل لاہور میں رکھے جانے کی درخواست کی ہے.

جس پر عدالت کے جج ارشد ملک نے فیصلہ محفوظ کر لیا ہے جو کچھ دیر بعد سنایا جائے گا۔

سابق وزیر اعظم کو عدالت سے جیل منتقل کرنے کے لیے عقبی راستے سے پہلے ہی بکتر بند گاڑیاں پہنچا دی گئی تھیں۔

واضح رہے کہ آج اسلام آباد کی احتساب عدالت کی جانب سے سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف کے خلاف العزیزیہ اسٹیل ملز ریفرنس میں 7سال قید اور جرمانے کی سزا سنا دی گئی جبکہ فلیگ شپ ریفرنس میں انہیں بری کیا گیا ہے۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎