کرتارپور رہداری کی طرف ایک اور قدم پاکستان نے بھارت کو دورے کی دعوت دے دی

کرتارپور راہداری کے معاملے میں اہم پیشرفت سامنے آئی ہے، حکومت پاکستان نے بھارتی سرکار کو اسلام آباد کے دورے کی دعوت دے دی۔


ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق حکومت پاکستان نے کرتار پور معاہدے کا ڈرافٹ بھارتی ہائی کمیشن کے ذریعے نئی دہلی بھجوادیا ہے۔

ترجمان کے مطابق پاکستان 2019ء میں کرتار پور راہداری کھولنے کا ارادہ رکھتا ہے اور یہ فیصلہ اسلامی اصولوں کے مطابق کیا گیا جو تمام مذاہب کا احترام کا درس دیتے ہیں۔

ترجمان کے مطابق ڈرافٹ میں کہا گیا ہے کہ بھارت کرتار پور معاہدے پر مذاکرات کے لئے وفد جلد اسلام آباد بھیجے۔

پاکستان نے تجویز دی ہے کہ بھارت وفد کی آمدپر ہونے والے دونوں ممالک کے مذاکرات سے معاہدے کو جلد حتمی دی جاسکتی ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق قائد اعظم محمد علی جناح ؒ کے وژن کے مطابق پرامن ہمسائیگی پر یقین رکھتے ہیں،پاکستان علاقائی امن و ترقی کےلئے کام کرتا رہے گا۔

ترجمان کے مطابق ڈی جی جنوبی ایشیا ڈاکٹر فیصل کرتار پور پر فوکل پرسن تعینات ہیں۔

وزیراعظم عمران خان نے 28 نومبر کو بھارتی وفد کی موجودگی میں کرتار پور راہداری کا سنگ بنیاد رکھا تھا۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎