ن لیگ کے سابق گورنرسندھ محمد زبیرپرحملے کی کوشش،اہلیہ سمیت بچ نکلنے میں کامیاب کیسے ہوۓ؟ اہم خبر سامنے آگئی

سابق گورنر محمد زبیر کے بیٹے کے مطابق کراچی کے علاقے ڈیفنس فیز 6 میں سابق گورنر سندھ محمد زبیر کو نامعلوم افراد کی جانب سے روکنے کی کوشش کی گئی۔


سابق گورنر سندھ محمد زبیر کے بیٹے کا کہنا ہے کہ نامعلوم مسلح افراد نے والد پر حملے کی کوشش کی، میری والدہ بھی گاڑی میں موجود تھیں۔ ملزمان کے پاس اسلحہ بھی تھا۔

مسلح گاڑی سوار افراد نے انہیں گاڑی روکنے کا کہا اور اپنی گاڑی ہماری گاڑی کے ساتھ لگا دی۔

 محمد زبیر کا کہنا تھا کہ وہ اہلیہ کے ہمراہ گاڑی میں گھر جارہے تھے.

محمد زبیر کا مزید کہنا تھا کہ ملزمان کی گاڑی میں سوار افراد کے ہاتھوں میں پستول تھی، تاہم جب میں نے اسلحہ نکال کر ان کی طرف کیا تو انہوں نے گاڑی بھگا دی۔ واقعہ کی اطلاع پولیس کو کردی گئی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ تین چار دن سے دھمکیاں مل رہیں تھیں۔ سیکیورٹی نہ مانگی اور نہ انہیں دی گئی مگر گزشتہ ایک دو ماہ میں جو واقعات ہوئے اس تناظر میں حکومت سیکیورٹی کا جائزہ لے۔

سابق گورنر کا مزید کہنا تھا کہ میں خیریت سے ہوں، کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہیں آیا، وزیراعلیٰ سندھ کو آگاہ کردیا ہے۔

محمد زبیر کے بیٹے احسن زبیر کا کہنا ہے کہ ملزمان سے گولی نہیں چلی یا پھر وہ کوئی پیغام دینا چاہتے تھے۔ ملزمان والد کی گاڑی کا پیچھا کر رہے تھے۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎