سنچوریں ٹیسٹ میں شکست کے بعد بیٹنگ کوچ بھی میدان میں آگئے اہم کھلاڑیوں کے لیے خطرے کی گھنٹی بجا دی

شکست کے بعد ڈریسنگ روم کا ماحول بھی اچھا نہیں ہوتا لیکن پاکستان ٹیم کے ڈریسنگ روم کا ماحول پہلے کی طرح نہیں ہے، گرانٹ فلاور۔ فوٹو: فائل


کیپ ٹاؤن: قومی کرکٹ ٹیم کے بیٹنگ کوچ گرانٹ فلاور کا کہنا ہے کہ ٹیم کے ڈریسٹ روم کا ماحول اس طرح کا نہیں جس طرح پہلے تھے۔

جنوبی افریقا سے سنچوریں ٹیسٹ میں شکست کے بعد کپتان اور ہیڈ کوچ کے درمیان گرما گرمی اور ڈریسنگ روم کے ماحول سے متعلق آنے والی خبریں خوش آئند نہیں اور اب بیٹنگ کوچ نے اس کی تصدیق کردی ہے۔

کرکٹ کی ویب سائٹ کرک انفو سے بات کرتے ہوئے قومی ٹیم کے بیٹنگ کوچ گرانٹ فلاور نے کہا کہ میچ میں شکست کسی کو پسند نہیں ہوتی اور شکست کے بعد ڈریسنگ روم کا ماحول بھی اچھا نہیں ہوتا لیکن پاکستان ٹیم کے ڈریسنگ روم کا ماحول پہلے کی طرح نہیں ہے۔

مکی آرتھر کا کپتان سرفراز، اسد شفیق اور اظہر علی کے ساتھ غیر اخلاقی رویہ

گرانٹ فلاور نے کہا کہ میں سلیکشن کے معاملات میں شامل تو نہیں لیکن بہت سے کھلاڑیوں کے لیے خطرہ دکھائی دے رہا ہے تاہم ایک دو کھلاڑیوں پر انگلیاں نہیں اٹھائی جاسکتیں۔

ہیڈ کوچ مکی آرتھر اور کھلاڑیوں کے درمیان سخت باتوں سے متعلق خبروں پر گرانٹ فلاور نے کہا کہ سب کو شیشے میں دیکھنے کی ضرورت ہے اور ایسا کبھی نہیں ہونا چاہیے، ہم سب ایک فیملی کی طرح ہیں اور جنوبی افریقا کے دورہ ٹیم ورک ہے۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎